آبدوز حادثے میں جاں بحق ہونے والے شہزاد داؤد کی پہلی برسی پر اہلیہ کا دکھ بھرا پیغام

آبدوز حادثے میں جاں بحق ہونے والے شہزاد داؤد کی پہلی برسی پر اہلیہ کا دکھ ...
آبدوز حادثے میں جاں بحق ہونے والے شہزاد داؤد کی پہلی برسی پر اہلیہ کا دکھ بھرا پیغام

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک سال قبل ٹائی ٹینک کے ملبے کی سیر کو جانے والی ’ٹائٹن‘ نامی آبدوز کو المناک حادثہ پیش آیا، جس میں دیگر لوگوں کے ہمراہ ایک پاکستانی باپ بیٹا شہزادہ داﺅد اور 19سالہ سلیمان بھی لقمہ اجل بن گئے تھے۔ اس سانحے کی پہلی برسی شہزاد داﺅد کی دل گرفتہ اہلیہ نے کرسٹیان داﺅد نے کہا ہے کہ ”اس سانحے نے مجھے توڑ کر رکھ دیا، میں اپنے شوہر اور بیٹے کو ہر دن، ہر گھنٹہ، ہر منٹ یاد کرتی ہوں۔“
اس سانحے کی پہلی برسی پر اپنے فیس بک اکاﺅنٹ پر کرسٹیان داﺅد نے ایک جلتی ہوئی موم بتی کی تصویر پوسٹ کی اور لکھا ہے کہ ”جب آپ کے اپنے دنیا سے جاتے ہیں تو وہ آپ کے جسم کا ایک ٹکڑا بھی اپنے ساتھ لے جاتے ہیں۔ آج ان کی برسی کے دن میں ایک سال پہلے گزرنے والے اس وقت کو یاد کر رہی ہوں، جس نے مجھے توڑ کر رکھ دیا۔ اس سانحے کے بعد مجھے جو محبت اور سپورٹ ملی، وہ بے مثال تھی اور اسی نے مجھے اس المناک صدمے کو سہنے کا حوصلہ دیا۔“
کرسٹیان داﺅد لکھتی ہیں کہ ”ان جانے والوں کا متبادل کوئی نہیں ہو سکا، ان کے جانے سے جو خلاءہماری زندگیوں میں آیا ہے، وہ کبھی پُر نہیں ہو سکتا۔ میں ان تمام لوگوں کی شکر گزار ہوں جنہوں نے اس صدمے سے نکلنے میں میری مدد کی۔ میں اس موم بتی کی روشنی اپنے ان پیاروں کو بھیج رہی ہوں۔ آپ بھی اپنی زندگی سے گم ہو جانے والے لوگوں کے لیے ایک موم بتی جلائیے اور اس کی روشنی انہیں بھیجئے۔“
واضح رہے کہ حادثے کا شکار ہونے والی آبدوز میں شہزاد داﺅد اور ان کے بیٹے سلیمان کے علاوہ 3 لوگ اور سوار تھے۔ ان میں ایک برطانوی ارب پتی مہم جو، ایک فرانسیسی ڈائیور اور اس آبدوز کی مالک کمپنی اوشن گیٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسرسٹاکٹن رش شامل تھے۔ سٹاکٹن رش خود اس آبدوز کو آپریٹ کر رہے تھے، جو سمندر کی تہہ میں پہنچ کر پانی کا دباﺅ برداشت نہ کر سکی اور پھٹ گئی۔