سام سنگ نے جدید 4 جی بی DDR3 کی بڑے پیمانے پرپیداوارشروع کردی

سام سنگ نے جدید 4 جی بی DDR3 کی بڑے پیمانے پرپیداوارشروع کردی
 سام سنگ نے جدید 4 جی بی DDR3 کی بڑے پیمانے پرپیداوارشروع کردی

  

لاہور(پ ر)سام سنگ الیکٹرانکس کمپنی لمیٹڈ نے 20 نینومیٹرپراسس ٹیکنالوجی پرمشتمل صنعت کی سب سے زیادہ جدید 4 جی بی DDR3 میموری کی بڑے پیمانے پرپیداوارشروع کردی جس کوکمپیوٹنگ اپلی کیشنزمیں وسیع پیمانے پراستعمال کیا جاتا ہے۔سام سنگ کے نظر ثانی شدہ ڈبل پیٹرن کی ٹیکنالوجی نے 20نینومیٹر کی ڈی ڈی آر3 کی پیدوارکوبروئے کارلاتے ہوئے ایک نیا سنگ میل عبورکردیا ہے جس میں موجودہ photolithography کے آلات اوربنیادی ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جارہاہے ۔سام سنگ نے بھی کامیابی سے ایک بے مثال یکسانیت کی حامل انتہائی پتلی ڈی الیکٹرک تہہ تخلیق کی ہے۔ان ٹیکنالوجیز کے اطلاق شدہ نئے20نینومیٹرکی DDR3 میموری کے ساتھ ، سام سنگ نے مینوفیکچرنگ پیداوار میں بہتری لائی ہے جوگزشتہ 25 نینومیٹر کی DDR3 کے مقابلے میں 30فیصد زیادہ ہے۔اس کے علاوہ ، نئے 20نینومیٹرکی 4GB DDR3 پرمبنی ماڈیول 25 فیصد تک توانائی کوبچا سکتی ہے۔ یہ بہتری عالمی کمپنیوں کو صنعت کی سب سے زیادہ جدید گرین آئی ٹی سلوشنز کی فراہمی کےلئے بنیاد فراہم کرتے ہیں۔سام سنگ میں میموری اورمارکیٹنگ کے ایگزیکٹونائب صدر Young-Hyun Jun نے کہا ہے کہ سام سنگ کی نئی توانائی بچت 20نینومیٹرکی ڈی ڈی آر3 ڈی ریم تیزی سے پی سی اورموبائل مارکیٹوں میں مقبول ہوررہی ہے۔

انھوں نے کہا کہ سام سنگ نئی نسل کوڈی ریم اورگرین میموری سلوشنزکی فراہمی کیلئے اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔

مزید : کامرس