محکمہ زراعت کے 6 ایڈہاک ملازمین مستقل نہ کرنے پر پی پی ایس سی سے جواب طلب

محکمہ زراعت کے 6 ایڈہاک ملازمین مستقل نہ کرنے پر پی پی ایس سی سے جواب طلب

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے محکمہ زراعت کے ایڈہاک ملازمین کی طرف سے مستقل کرنے کی درخواست پر پنجاب پبلک سروس کمیشن سے جواب طلب کر لیا۔جسٹس محمد خالد محمود خان نے شاہد حسین سمیت6ایڈہاک ملازمین کی درخواست پر سماعت شروع کی تو درخواست گزاروں کے ایڈووکیٹ وارث سرویہ نے عدالت کو بتایا کہ درخواست گزار گریڈ17میں محکمہ زراعت کے ملازم ہیں ، انہوں نے عدالت کو آگاہ کیا کہ وزیر اعلیٰ کے حکم پر پنجاب حکومت کے تمام سرکاری ملازمین کو مستقل کر دیا گیا ہے جبکہ درخواست گزاروں کے ساتھ امتیازی سلوک برتا جا رہا ہے، انہوں نے عدالت کو بتایا کہ پپلک سروس کمیشن نے شرط عائد کر دی ہے کہ درخواست گزاروں کو انٹرویو میں کوالیفائی کرنے کے بعد مستقل کیا جائے گا، انہوں نے کہا کہ پبلک سروس کمیشن کی یہ شرط غیرقانونی ہے، انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ پبلک سروس کمیشن کی طرف انٹرویو لینے کی شرط کو غیرقانونی قرار دیتے ہوئے درخواست گزاروں کو مستقل کرنے کے احکامات جار ی کئے جائیں، عدالت نے پبلک سروس کمیشن سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت15اپریل تک ملتوی کر دی ۔

پی پی ایس سی

مزید : صفحہ آخر