محبت اور جنگ میں سب جائز ہے

محبت اور جنگ میں سب جائز ہے
 محبت اور جنگ میں سب جائز ہے

  


ممبئی (این این آئی)بالی وڈ اداکارہ کنگنا راناوت اور رِتک روشن کی مبینہ محبت کی داستان عام ہوکر کچہری تک پہنچ گئی ہے۔ رِتک روشن اور اداکارہ کنگنا نے اس کہاوت کو سچ ثابت کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رکھی ہے کہ محبت اور جنگ میں سب جائز ہے۔ماڈرن زمانہ ہے تو اپنے اس مبینہ بریک اپ کے بعد پہلے دونوں نے ٹوئٹر پر ایک دوسرے کو زیر کرنے کی کوشش کی اور جب اتنے سے بھی دل نہیں بھرا تو قانونی نوٹس بھیجے گئے۔کہا جاتا ہے کہ کنگنا اور رِیتک نے اب تک اپنی نزدیکیوں اور رشتے کو چھپا کر رکھا تھا۔ کنگنا کا الزام ہے کہ انھیں فلم ’’عاشقی تھری‘ ‘سے نکلوانے میں رِیتک کا ہاتھ ہے اور ایک پریس کانفرنس میں کنگنا نے رِیتک کو ’’سلی ایکس‘ ‘کہہ کر پکارتے ہوئے کہا کہ وہ اب زندگی میں آگے بڑھ چکی ہیں۔اس کے جواب میں رِتک نے ایک ٹویٹ میں ’عشق کے لیے کنگنا پر پوپ کو ترجیح دی۔ جواب میں کنگنا کی ایک دوست نے ان دونوں کے مبینہ رشتے کی مکمل کہانی نے روزنامہ مبئی مرر کے سامنے پیش کردی اور بتایا کہ اپنی طلاق کے بعد رِیتک نے 2014 میں پیرس میں کنگنا کو شادی کی پیشکش بھی کی تھی۔لیکن کچھ ہی عرصے بعد وہ بدل گئے۔ اب ریتک کی باری تھی انھوں نے بھی انھیں وکیل کے ذریعے نوٹس بھجوا دیا اور الزام لگایا کہ کنگنا نے انھیں اب تک 1439 ای میلز لکھی ہیں۔

دونوں کے درمیان الزامات اور جوابی الزامات کا سلسلہ ابھی جاری ہے۔ دیکھتے ہیں کہ آخری تھپڑ کس کا ہوگا۔

مزید : کلچر


loading...