پاکستان کو سیکولر بنانے کی استعماری سازشوں کو عوام قبول نہیں کرینگے ،یکجہتی کونسل کی مجلس عامہ کا اجلاس

پاکستان کو سیکولر بنانے کی استعماری سازشوں کو عوام قبول نہیں کرینگے ،یکجہتی ...

لاہور ( نمائندہ خصوصی ) ملی یکجہتی کونسل کی مرکزی مجلس عاملہ کے صاحبزادہ ابوالخیرمحمد زبیر کی زیر صدارت جامعتہ المنتظر میں منعقد ہونے والے اجلاس میں واضح کیا گیا کہ پاکستان کے اسلامی تشخص کو ختم کرکے سیکولر بنانے کی استعماری سازشوں کو عوام کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔تحفظ ناموس رسالت کے قانون میں کسی قسم کی ترمیم کی مزاحمت کی جائے گی۔ممتاز قادری کے چہلم کو کامیاب بنایا جائے گا۔ متنازع حقوق نسواں بل میں سے قرآن و حدیث سے متصادم شقوں کی نشاندہی کرکے علما کی رہنما ئی اور خواتین کی مشاورت سے متبادل مسودہ قانو ن تیار کرنے کی علمی تحقیقاتی کمیشن کو ہدایت کردی گئی ہے۔ اجلاس میں آیت اللہ حافظ ریاض حسین نجفی، علامہ سید ساجد علی نقوی،علامہ نیا ز حسین نقوی، لیاقت بلوچ، عاکف سعید،علامہ امین شہیدی،پروفیسر محمد ابراہیم خان،علامہ محمد افضل حیدری،علامہ عارف واحدی، ثاقب اکبر،آصف لقمان قاضی، ڈاکٹر وسیم اختر، نذیر احمد جنجوعہ،عبدالمتین اخونزادہ،علامہ حسین احمد اعوان،صفدر گیلانی، حافظ محمد حبیب،سید لطیف الرحمان شاہ، حمزہ نوید ، حافظ کاظم رضا نقوی، ایوب بیگ، مولانا محمد باقر گھلو، مولانا سید علی نقوی، نثار علی ترمذی اور دیگرقائدین شریک تھے۔ ملی یکجہتی کونسل نے پنجاب حکومت کی نصاب کمیٹی کی اس سفارش کو مسترد کرتے ہوئے تشویش کا اظہار کیا ہے کہ طلبا کو پڑھایا جائے کہ پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٰ وسلم سابقہ مذاہب کی تنسیخ کے لئے نہیں آئے تھے اورواضح کیا گیا کہ یہ تصور تعلیمات الٰہیہ کے خلاف ہے، ایسی کوئی بھی تجویز لادینیت پھیلانے کے مترادف ہوگی جسے ہم مسترد کرتے ہیں۔حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہٰ وسلم آخری پیغمبر اور خاتم النبین ہیں، جن کی آمد پر گذشتہ ادیان کی تنسیخ ہوگئی ۔اسلام مکمل دین ہے۔ اجلاس میں قاضی ظفرالحق کی سربراہی میں ملی یکجہتی کونسل کے علمی تحقیقاتی کمیشن سے متنازع حقوق نسواں بل میں سے قرآن و حدیث سے متصادم شقوں کی نشاندہی اور ڈاکٹر سمیحہ راحیل قاضی کے متبادل مسودہ پر غور کرکے نیا مسودہ قانون مرتب کرنے کی ہدایت کی گئی۔جس میں علما کی رہنما ئی اور خواتین کی مشاورت شامل ہوگی۔ تاکہ خاندانی نظام کو بچایا جاسکے۔ شہید ناموس رسالت غازی ممتا ز حسین قادری کے 27۔ مارچ کولیاقت باغ میں منعقد ہونے والے چہلم میں تمام رکن جماعتوں نے بھر پور شرکت کا فیصلہ کرتے ہوئے اسے تاریخ ساز اجتماع بنانے کے عزم کا اظہار کیا جبکہ اسی دن(27۔ مارچ ) لاہور میں جماعت اسلامی خواتین کے ناموس رسالت و حقوق نسواں مارچ کو کامیاب بنانے پر زوردیتے ہوئے واضح کیا گیاکہ طے شدہ معاملات کو چھیڑنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔حکومت لادینیت کا پرچار چھوڑ دے۔ ملی یکجہتی کونسل کی مرکزی مجلس عاملہ نے صوبائی تنظیموں کو 2 اپریل کواسلام آباد میں ہونے والی علما و مشائخ کانفرنس کو کامیاب بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے اسلامی تشخص کو درپیش خطرات کا بھر پور مقابلہ کیا جائے گا۔ اجلاس میں جماعت اسلامی بنگلہ دیش کے رہنما مولانا مطیع الرحمان کے ڈیتھ وارنٹ جاری کرنے کی مذمت کرتے ہوئے حکومت سے انڈیا، پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان سہہ فریقی معاہدے کی خلاف ورزی کی روشنی میں معاملا عالمی عدالت انصاف میں لے جانے اور وزارت خارجہ سے احتجاج کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا۔ لیاقت بلو چ کا کہنا تھا کہ گناہگاروں کوایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکال دیا گیا ہے تو بے گناہ تحریک جعفریہ کو بھی نکالا جائے۔ایک سوال پر رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹر وسیم اختر نے وضاحت کی کہ حقوق نسواں بل پر ان کے اختلافی نو ٹ موجود ہیں، حکومت نے عددی برتری پر متنازع مسودہ منظور کروایا۔

مزید : علاقائی


loading...