شہبازشریف پیکیج سے کسانوں کو کچھ نہیں ملے گا،پرویزالٰہی

شہبازشریف پیکیج سے کسانوں کو کچھ نہیں ملے گا،پرویزالٰہی

لاہور(جنرل رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ کے سینئرمرکزی رہنما و سابق نائب وزیراعظم چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ کسانوں کیلئے نوازشریف پیکیج پٹواریوں کی نذر ہو گیا، اب پنجاب میں شہبازشریف پیکیج سے بھی کسانوں کو کچھ نہیں ملے گا، بڑے کے بعد چھوٹے بھائی کسانوں کے کھاتے میں 100ارب روپے ڈال رہے ہیں لیکن وہ پہلے 200ارب کا حساب تو دیں جو کسانوں تک پہنچے ہی نہیں، موجودہ حکمرانوں نے کسانوں کو برباد کر دیا ہے اور ہماری حکومت میں انہیں دی گئی سہولتیں اور مراعات بھی ختم کر دیں۔ وہ پاکستان مسلم لیگ کے تنظیمی اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ کی آرگنائزنگ کمیٹیوں کو چاہئے وہ تنظیمی کام تیز کر دیں اور جلد مکمل کر لیں، جعلی ممبر شپ نہیں کی جائے گی۔ سابق صدر پرویزمشرف کے بیرون ملک جانے کے بارے میں سوال پر انہوں نے کہا کہ وہ آتے جاتے رہیں گے۔ چودھری پرویزالٰہی نے مزید کہا کہ کسان رو رہا ہے، پیداوار کی آمدن خرچہ سے بھی کم ہے، یہ حکمران صرف کسانوں کا نام لیتے ہیں عملی طور پر کچھ نہیں کیا، پنجاب میں ہمارے بنائے گئے 600کلومیٹر پکے کھالوں، یونین کونسل کی سطح پر دئیے گئے لیزر لیولرز اور لائیو سٹاک کیلئے مفت ادویات اور ویکسینیشن کی سہولتوں میں انہوں نے کوئی اضافہ نہیں کیا بلکہ ہماری حکومت کی جانب سے ساڑھے 12 ایکڑ تک کے مالکان کو دی گئی ٹیکس کی چھوٹ بھی واپس لے لی۔ اجلاس میں سینیٹر کامل علی آغا، چودھری ظہیرالدین، شبیر شاہ، عالمگیر ایڈووکیٹ، میاں عبدالستار، میاں منیر، شیخ عمر حیات، ذوالفقار پپن، تنویر اعظم چیمہ، بلال مصطفی شیرازی، انجینئر شہزاد الٰہی، آمنہ الفت، خدیجہ فاروقی، ماجدہ زیدی، کنول نسیم سمیت دیگر رہنما شریک تھے۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ پارٹی کی تنظیم نو کے سلسلے میں پہلی تمام تنظیمیں ختم کی گئیں اور مختلف رہنما بطور آرگنائزر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ لاہور ڈویژن میں بھی تنظیم سازی کا باقاعدہ آغاز ہو چکا ہے جبکہ طارق بشیر چیمہ، احمد یار ہراج کی زیر قیادت ملتان، خانیوال، بہاولپور، ڈی جی خان، مظفر گڑھ اور بہاولنگر میں تنظیم سازی جاری ہے۔ چودھری ظہیرالدین اور محمد بشارت راجہ راولپنڈی، فیصل آباد، چکوال، اٹک، جہلم، باؤ رضوان، ڈاکٹر عظیم الدین لکھوی سیالکوٹ، قصور، نارووال، ننکانہ صاحب میں پارٹی کی ری آرگنائزیشن میں مصروف ہیں۔

مزید : صفحہ آخر


loading...