ہائی کورٹ :پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کیس میں موجودہ کی بجائے سابق گورنر کا جواب داخل ،ایڈووکیٹ جنرل وضاحت کے لئے طلب

ہائی کورٹ :پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کیس میں موجودہ کی بجائے سابق گورنر کا جواب ...
ہائی کورٹ :پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کیس میں موجودہ کی بجائے سابق گورنر کا جواب داخل ،ایڈووکیٹ جنرل وضاحت کے لئے طلب

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ میں پبلک اکاﺅنٹس کمیٹیوں کو غیر فعال بنانے کے خلاف چیئرمین پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میاں محمود الرشید کی درخواست کے جواب میں حکومت کی طرف سے موجودہ گورنر کی بجائے سابق گورنر پنجاب لطیف کھوسہ کا 4 برس پرانا جواب پیش کردیا گیا، جس پرفاضل جج نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو وضاحت کے لئے طلب کرلیاہے۔جسٹس شاہد وحید نے چیئرمین پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میاں محمود الرشید کی درخواست پر سماعت شروع کی تو درخواست گزار کے وکیل شیراز ذکاءنے موقف اختیار کیا کہ پنجاب حکومت ضلعی حکومتوں کی آڈٹ رپورٹس پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں پیش نہیں کر رہی، ضلعی حکومت کے فنڈز میں کروڑوں روپے کی کرپشن ہوئی جسے پنجاب حکومت چھپانا چاہتی ہے ،آڈٹ رپورٹس کو اکاﺅنٹس کمیٹی میں پیش کرنے کا حکم دیا جائے، انہوں نے نشاندہی کی کہ ایڈووکیٹ جنرل آفس نے موجودہ گورنر رفیق رجوانہ کی بجائے سابق گورنر پنجاب لطیف کھوسہ کا 4 برس پرانا تحریری جواب داخل کرایا ہے۔اس نشاندہی پر عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب شکیل الرحمن کو 19اپریل کو وضاحت کے لئے طلب کر لیاہے۔

مزید : لاہور


loading...