پاکستانی جوڑے نے شادی کے تمام اخراجات عطیہ کرکے مثال قائم کردی

پاکستانی جوڑے نے شادی کے تمام اخراجات عطیہ کرکے مثال قائم کردی
پاکستانی جوڑے نے شادی کے تمام اخراجات عطیہ کرکے مثال قائم کردی

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) اسلام نے سادگی اپنانے اور اصراف سے بچنے کا حکم دیا ہے لیکن بعض معاشرتی رسوم و رواج کے باعث فضول خرچی ہماری زندگی کا اہم جزو بن چکی ہے۔ بالخصوص شادی کے معاملے میں فضول رسموں کو پورا کرنے کی سکت نہ ہونے کے باعث ہزاروں لڑکیوں کے سروں پر چاندی آگئی لیکن انہیں پیا گھر نصیب نہیں ہو سکا۔ ایک طرف جہاں بہت سے لوگ شادی بیاہ کی رسوم پر ہونے والے اخراجات اٹھانے کی سکت نہ ہونے کے باعث اپنی بیٹیوں کو گھروں میں بٹھانے پر مجبور ہیں تو دوسری طرف ایک پاکستانی جوڑے نے بھی ان والدین کے درد کا احساس کیا اور اپنی شادی کے تمام اخراجات راہِ خدا میں عطیہ کرکے مثال قائم کردی۔

پاکستانی جوڑے شہزان اور زینب چنارا کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہے جس میں انہوں نے اپنی بہترین شادی کا احوال بیان کیا ہے۔ ویڈیو میں اس جوڑے نے بتایا ہے کہ ایک سال پہلے انہوں نے دھوم دھام سے اپنی شادی کی تیاریاں شروع کیں اور مختلف مہنگے ڈیزائنرز اور وینیوز کا انتخاب کیا، جب شادی کی تیاریاں چل رہی تھیں تو اسی دوران ہم نے سوچا کہ ایک ایسی دنیا میں جہاں بہت سے لوگوں کو کھانے کو کچھ نہیں ملتا ، ہماری اس طرز کی شادی ٹھیک ہوگی۔ یہی وہ وقت تھا جب ہم نے شادی پر تمام فضولیات سے احتراز برتنے کا فیصلہ کیا اور شادی پر اٹھنے والے تمام اخراجات عطیہ کرنے کا ارادہ کیا۔

شہزان اور زینب نے بتایا کہ ہم نے شادی کے تمام اخراجات آغا خان فاﺅنڈیشن کو عطیہ کردیے کیونکہ یہ تنظیم دنیا بھر میں لوگوں کی فلاح کا کام کر رہی ہے اور ہم اس کے کام سے بہت حد تک مطمئن تھے۔ ہم نے نہ صرف اپنی شادی کے اخراجات عطیہ کیے بلکہ شادی میں آنے والے مہمانوں کو بھی دولہا دلہن کو دیے جانے والے تحائف کی رقم عطیہ کرنے کی ترغیب دی۔

ممبئی میں بیچ چوراہے شادی کی پیشکش ،جوڑے کو شہر سے نکال دیا گیا

شہزان اور زینب نے واقعی ایک بہترین مثال قائم کی ہے، اگر باقی لوگ بھی اسی مثال کو نمونہ بنائیں اور جہیز اور دیگر رسوم سے انکار کردیں تو ہزاروں لاکھوں بیٹیوں کے والدین با آسانی اپنے فریضہ سے سبکدوش ہو سکتے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...