بادامی باغ ، طالب علم کو مارنے پر والد اور رشتے داروں نے تشدد کرکے استاد کو ہلاک کر دیا

بادامی باغ ، طالب علم کو مارنے پر والد اور رشتے داروں نے تشدد کرکے استاد کو ...

  



لاہور( خبرنگار ) بادامی باغ کے علاقہ میں طالب علم پر مبینہ تشدد کے الزام میں مشتعل والداوررشتے داروں کے تشدد سے 50 سالہ سکول ٹیچررضوان تنویرہلاک ہوگیا۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے طالب علم کے والد راشد کوحراست میں لے لیاہے۔ بتایاگیاہے کہ واسا کالونی بادامی باغ کا رہائشی 50 سالہ رضوان تنویرگھرکے قریب ایک سکول میں ٹیچرتھا، گزشتہ روز چوتھی جماعت کے طالب علم بلال راشد کوسبق یاد نہ کرنے پرڈانٹ ڈپٹ کی اور اس کو تھپڑ دے مارا، جس پر طالب علم روتاہواگھرچلاگیا۔بعدمیں طالب علم کا والد راشدمحمود اپنے رشتے داروں اور محلے دارو ں کے ہمراہ سکول آگیا، اور آتے ہی رضوان تنویر کے ساتھ لڑائی جھگڑا شروع کردیا ،راشدا اور رشتہ داروں نے ٹیچرکے ساتھ ہاتھاپائی شروع کردی اور مبینہ طور پرتشدد بھی کیا ۔جھگڑے کے دوران ٹیچررضوان تنویرگرکرشدید زخمی ہوگیااور سرپر شدید چوٹیں آنے پر اسے میوہسپتال لے جایاجارہاتھاکہ راستے میں ہی جاں بحق ہوگیا۔ مقتول چارکم سن بچوں کا باپ اور کئی سال سے پرائیویٹ سکول میں ٹیچرتھا۔ پولیس نے نعش پوسٹ مارٹم کے بعد ورثاکے حوالے کردی ہے اور مقتول کے برادرنسبتی ندیم احمدکی درخواست پر مقدمہ درج کرکے طالب علم کے والد راشد کو حراست میں لے لیاہے ۔ دوسری جانب واقعہ کے خلاف دن بھرکشیدگی کی صورتحال برقراررہی تاہم پولیس نے سکول کے اردگرد بھاری نفری تعینات کرکے سیکیورٹی کوسخت کردیاہے۔

مزید : علاقائی


loading...