مردم شماری پر تحفظات دور نہ ہوئے تو نتائج تسلیم نہیں کرینگے‘ ظہور دھریجہ

مردم شماری پر تحفظات دور نہ ہوئے تو نتائج تسلیم نہیں کرینگے‘ ظہور دھریجہ

  



ملتان (سٹی رپورٹر)سب سول سیکرٹریٹ کے نام پر صرف لولی پاپ دیے جا رہے ہیں، لاہور میں کھربوں کے منصوبے آٹھ ہفتے میں مکمل ہوتے ہیں، نشتر گھاٹ 8 سالوں میں بھی نہیں بن سکا اور نہ ہی ملتان بگ سٹی کے اعلان پر عملدرآمد ہو سکا، صوبہ سرائیکستان کے بغیر مسئلے حل نہیں ہونگے۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستان قومی کونسل کے رہنماؤں خواجہ غلام فرید کوریجہ اور ظہور دھریجہ نے پریس کانفرنس سے(بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر شعیب خان پنوار، سلیم خان جتوئی، سیف اللہ خان اکرم فریدی، حاجی عید احمد دھریجہ، زبیر دھریجہ،شیخ ناصر ظہیر، عامر سلیم، جام اجمل، ناصر ببلو، حافظ ، فہیم بھٹہ، فیاض احمد، جام ایم ڈی ، زین العابدین اور دوسرے موجود تھے۔سرائیکی رہنماؤں نے کہا چاچڑاں کوٹ مٹھن کے درمیان نشتر گھاٹ جون تک چالو نہ کیا گیا تو دھرنے دیں گے اور حکمرانوں کے پتلے نذر آتش کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ مردم شماری آگاہی مہم گھر گھر میں جاری ہے، وسیب کے تحفظات دور نہ کئے گئے تو نتائج تسلیم نہیں کرینگے۔ انہوں نے کہا لاہور میں سرائیکی کانفرنس منعقد کر رہے ہیں جہاں وسیب کا مقدمہ بھرپور طاقت سے پیش کریں گے۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا گورنر ملک رفیق رجوانہ نے ملتان میانوالی موٹر وے، ملتان دیرہ غازی خان موٹر وے اور مظفر گڑھ علی پور موٹر وے بنانے کا اعلان عرصے سے کرتے آ رہے ہیں لیکن ہوتا یہ ہے کہ اعلان سرائیکی وسیب کیلئے ہوتا ہے اور منصوبے لاہور میں شروع کر دیئے جاتے ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...