”تم نے آگے سے مزاحمت کیوں نہ کی “، بھارتی عدالت نے مبینہ جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی کے مشکوک بیان پر ملزم بری کر دیا

”تم نے آگے سے مزاحمت کیوں نہ کی “، بھارتی عدالت نے مبینہ جنسی زیادتی کا ...
”تم نے آگے سے مزاحمت کیوں نہ کی “، بھارتی عدالت نے مبینہ جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی کے مشکوک بیان پر ملزم بری کر دیا

  



ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن )بھارت میں مبینہ جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی کے اپنے ہی بیان نےاسے مشکوک کر دیا ، عدالت نے جنسی زیادتی کے حوالے سے لڑکی کے بیان پر شکوک کا اظہار کرتے ہوئے استفسار کیا کہ” تم نے آگے سے مزاحمت کیوں نہیں کی ؟“۔ عدالت نے مشکوک بیان پر ملزم کی سز ا معطل کر تے ہوئے فوری رہائی کا حکم دیدیا۔

دی ٹائمز آف انڈیا کے مطابق بمبئی ہائی کورٹ میں ریپ کیس کے حوالے سے 23سالہ لڑکی کی درخواست کی سماعت ہوئی جہاں اس نے موقف اپنایا کہ اسے ایک شخص نے زبردستی کار میں بیٹھایا اور پھر ہوٹل میں لیجا کر ریپ کیاجس پر عدالت نے استفسار کیا کہ آیا 23سالہ خاتون کو ایک اکیلا شخص زبردستی کار میں بیٹھا کر خاموش کرا سکتا ہے اورپھر انتظامیہ سے چھپا کر ہوٹل میں لیجا کر جنسی زیادتی کر سکتا ہے ؟

نوجوان ماڈل نے خودکشی کر لی ، وجہ ایسی کہ جانکر آپ بھی افسردہ ہو جائیں گے

جسٹس اننت بدر نے خاتون کے موقف پر سوالیہ اٹھاتے ہوئے ملزم سمیر کو دی جانے والی 7سالہ قید کی سزا معطل کر تے ہوئے رہا کر دیا ۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ بادی النظر میں خاتون کا پیش کردہ موقف ثابت نہیں ہو سکا کیونکہ وہ چاہتی ہے عدالت اس بات پر یقین کر لے کہ ایک بالغ لڑکی کو ایک شخص زبردستی کار میں بیٹھاکر رومال سے منہ باندھ سکتا ہے اور اس حالت میں ملزم کار چلاتے ہوئے اسے ہوٹل تک بھی لیجا سکتا ہے جبکہ خاتون کے ہاتھ کھلے ہوں ۔

جج نے کہا کہ شواہد میں کہیں بھی یہ ثابت نہیں ہوتا کہ اس نے آگے سے مزاحمت کی ہو جبکہ اس کے دونوں ہاتھ کھلے ہوئے تھے اور کار خود ملزم چلا رہا تھا ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...