’والد کے منع کرنے کے باوجودطاہرہ سید سے شادی کی، طلاق کے بعد ۔ ۔ ۔‘نعیم بخاری نے اہم راز سے پردہ اٹھادیا

’والد کے منع کرنے کے باوجودطاہرہ سید سے شادی کی، طلاق کے بعد ۔ ۔ ۔‘نعیم ...
’والد کے منع کرنے کے باوجودطاہرہ سید سے شادی کی، طلاق کے بعد ۔ ۔ ۔‘نعیم بخاری نے اہم راز سے پردہ اٹھادیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر وکیل اور اینکر نعیم بخاری نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں والد نے طاہرہ سید سے شادی نہ کرنے کا مشورہ دیا تھا لیکن میں نے شادی کرلی ، آپ اسے بغاوت بھی کہہ سکتے ہیں ، لیکن طلاق کے بعد جب واپس میکے گیاتووالد نے کہاکہ ’سبحان اللہ، منڈا واپس آگیا، اسی نمازاں پڑھ پڑھ ایہہ طلاق کرائی اے(سبحان اللہ، لڑکاواپس آگیا، طلاق کرانے کے لیے نمازیں پڑھتے رہے ہیں)۔

پروگرام ’ایک دن جیو کیساتھ‘ میں سہیل وڑائچ کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے نعیم بخاری نے اعتراف کیا کہ اُنہوں نے ابا جان کو بڑا مایوس کیا، والدکی خواہش تھی کہ ڈاکٹر بنیں، ایف ایس سی میڈیکل میں داخلہ لے کر چھوڑدیا، فوج میں جانے اور سی ایس ایس کرنے کی خواہش بھی پوری نہیں کی ، ویسے شاید ایک ہی دفعہ بغاوت ہوئی جب میں طاہرہ سیدہ سے شادی کرنا چاہتا تھا ،والد نے اس کی سخت مخالفت کی،کہاکہ تم پچھتاﺅ گے لیکن میں تلاہواتھا،والد صاحب بالآخر ٹھیک نکلے ۔نعیم بخاری نے بتایاکہ رشتہ ختم ہونے کے بعدجب واپس میکے گیاتودیکھاکہ ڈاکٹرصاحب لاہور  کیولری گراﺅنڈ کرائے والے گھر میں بیٹھے ہوئے ہیں،بولے کہ سبحان اللہ ، منڈا واپس آگیا، اسی نمازاں پڑھ پڑھ ایہ طلاق کرائی، وہ بہت خوش تھے ۔ایک سوال کے جواب میں نعیم بخاری نے بتایاکہ محبت کی شادی نے زندگی مختلف کردی، رویے تو مشکل سے بدلتے ہیں لیکن سرکل بدل جاتے ہیں، دس سال تقریباً شادی رہی، ہمارے دو بچے تھے لیکن پھر علیحدگی ہوگئی۔

مزید : اسلام آباد


loading...