’میری مالکن کا بیٹا اور بیٹی مجھے برہنہ کرکے۔۔۔ ‘ اسلام آباد کے گھر سے بھاگنے والی کم سن ملازمہ نے افسوسناک تفصیلات بیان کردیں

’میری مالکن کا بیٹا اور بیٹی مجھے برہنہ کرکے۔۔۔ ‘ اسلام آباد کے گھر سے ...
’میری مالکن کا بیٹا اور بیٹی مجھے برہنہ کرکے۔۔۔ ‘ اسلام آباد کے گھر سے بھاگنے والی کم سن ملازمہ نے افسوسناک تفصیلات بیان کردیں

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) مالکان کے تشدد سے تنگ آکر گھر سے بھاگنے والی کم سن ملازمہ صائمہ نے اسسٹنٹ کمشنر بشریٰ راﺅ کو اپنا بیان ریکارڈ کرادیا ہے جس میں صائمہ نے بتایاکہ مالکن الماس ، اس کی بیٹی اور بیٹا برہنہ کرکے تشدد کرتے تھے اور مالکن نے دوسری ملازمہ کو کہا کہ صائمہ کو ماردیں جس پروہ ڈر کر گھر سے بھاگ کھڑی ہوئی اور پڑوسیوں کے گھر چھپ گئی۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق اپنے بیان میں صائمہ نے بتایاکہ اسے مالکان بھوکا پیاسا رکھتے تھے ، مالکن کی بیٹی دانتوں سے منہ پر کاٹتی تھی جبکہ پاﺅں میں بیڑیاں ڈال دی جاتیں، والدہ سے ملنے کا کہتی تو آگے سے جواب دیتے کہ اس کا انتقال ہوچکا ہے ، اب آپ کہیں نہیں جاسکتیں، بھاگ کر پڑوسیوں کے پاس پہنچ گئی اور پھر میڈیا تک خبریں پہنچ گئیں ۔

مزید : اسلام آباد


loading...