سال کا وہ دن جب آپ کی موت کا سب سے زیادہ خطرہ ہوتا ہے، سائنسدانوں نے سب سے حیران کن انکشاف کردیا

سال کا وہ دن جب آپ کی موت کا سب سے زیادہ خطرہ ہوتا ہے، سائنسدانوں نے سب سے ...
سال کا وہ دن جب آپ کی موت کا سب سے زیادہ خطرہ ہوتا ہے، سائنسدانوں نے سب سے حیران کن انکشاف کردیا

  



زیورخ (نیوز ڈیسک) سالگرہ کا دن اکثر لوگوں کے لئے بہت اہمیت رکھتا ہے اور عموماً اس دن کو لوگ مختلف طریقوں سے مناتے ہیں اور دوستوں عزیزوں کے ساتھ ملکر اپنی خوشی کا بھی خوب اظہار کرتے ہیں۔ دوسری جانب سوئٹزلینڈ کے سائنسدانوں کی ایک تازہ ترین تحقیق میں ایک ایسا انکشاف کر دیا گیا ہے کہ لوگ سالگرہ کے دن خوش ہونے کی بجائے خوف سے دبکے رہیں گے کہ کہیں یہ زندگی کا آخری دن ہی نہ ہو۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ کسی بھی شخص کا اپنی سالگرہ کے دن مرنے کا امکان کسی بھی اور دن کی نسبت 14 فیصد زیادہ ہوتا ہے۔ اس تحقیق کے لئے سائنسدانوں نے سوئٹزرلینڈ میں 1969 ءسے 2008ءکے درمیان پیدا ہونے والے 25لاکھ سے زائد افراد کی موت کے دن کے بارے میں اعدادوشمار جمع کئے۔

دنیا کے خوش و خرم ممالک میں ناروے پہلے ، پاکستان 12درجے بہتری کے ساتھ 80ویں نمبر پر آگیا ، بھارت کا 122واں نمبر : اقوام متحدہ نے رپورٹ جاری کردی

تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ اس عجیب و غریب رجحان کی کئی وجوہات ہوسکتی ہیں جن میں سے ایک یہ بھی ہے کہ شاید سالگرہ کے دن لوگ زیادہ خطرات مول لینے کے لئے تیار ہوتے ہیں۔ وہ کھانے پینے میں بداحتیاطی کرسکتے ہیں یا اپنی سالگرہ کی تقریب میں پہنچنے کے لئے غیر ذمہ دارانہ ڈرائیونگ کا مظاہرہ بھی کرسکتے ہیں، جو جان لیوا ثابت ہو سکتا ہے۔

زیورخ یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے سائنسدان ڈاکٹر ولادیتا اجدیسک گراس، جنہوں نے تحقیق کی سربراہی کی، کا کہنا تھا کہ اپنی سالگرہ کے دن حادثے کا شکار ہونے والوں، یا خود کشی کرنے والوں کی تعداد ظاہر کرتی ہے کہ اس دن اور موت کے درمیان ایک تہرا تعلق ضرور ہے۔ دوسری جانب ماہر شماریت سپیگل ہالٹر ان نتائج سے اتفاق نہیں کرتے۔ ان کا کہنا ہے کہ غالباً کچھ لوگوں کے یوم پیدائش کے متعلق حاصل کئے گئے اعدادوشمار درست نہیں تھے جس کی وجہ سے سالگرہ کے دن اموات کی شرح دوسرے دنوں کی نسبت 14 فیصد زیادہ نظر آرہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بظاہر ہ بات تسلیم کران مشکل نظر آتا ہے کہ سالگرہ کے دن موت کے زیادہ امکان کی کوئی سائنسی وجوہات موجود ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...