بھارت نے میارپراجیکٹ پر ڈیزائن واپس لے لیا، پاکستانی کمیشن کو ڈیمز کا دورہ کرانے پر رضا مند : مذاکرات کا اعلامیہ جاری

بھارت نے میارپراجیکٹ پر ڈیزائن واپس لے لیا، پاکستانی کمیشن کو ڈیمز کا دورہ ...
بھارت نے میارپراجیکٹ پر ڈیزائن واپس لے لیا، پاکستانی کمیشن کو ڈیمز کا دورہ کرانے پر رضا مند : مذاکرات کا اعلامیہ جاری

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان اور بھارت کے درمیان سندھ طاس معاہدے پر ہونے والے دو روزہ مذاکرات ختم ہوگئے جس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔ مذاکرات کے دوران بھارت نے میار ہائیڈرو پاور پراجیکٹ پر اپنا ڈیزائن واپس لے لیا جبکہ بھارت پاکستان کے انڈس واٹر کمیشن کو ڈیمز کا دورہ کرانے پر بھی رضا مند ہوگیا۔

سندھ طاس معاہدے پر ہونے والے مذاکرات کا باقاعدہ اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے ۔ اعلامیے کے مطابق دونوں ملکوں کے انڈس واٹر کمیشنز کے حالیہ اجلاس میں پاکستان کی جانب سے کمیشن کے گزشتہ اجلاسوں میں کیے جانے والے اعتراض کے باعث بھارت نے میار ہائیڈرو پاور پراجیکٹ پر اپنا ڈیزائن واپس لے لیا۔

بھارت کو پوری دنیا میں منہ کالا کروانے کے بعد بھی چین نہ آیا ایک بار پھر پاکستان کو ایٹمی حملہ کرنے کی گیڈر بھبھکیاں دینی شروع کر دیں

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ انڈس واٹر کمیشن اجلاس کے دوران بھارتی منصوبوں لوئر کلنائی اور پکل ڈل پر پاکستان کے اعتراضات پر بھی گفتگو کی گئی ۔ پاکستان کے اعتراضات پر بھارت نے دونوں منصوبوں پر پاکستان کے تحفظات پر دوبارہ غور اور اگلے اجلاس میں انہیں دور کرنے پر رضا مندی کا اظہار کیا۔

پاکستان اور بھارت کے انڈس واٹر کمیشنز  میں ہونے والے مذاکرات کا احوال کمشنر انڈس واٹر کمیشن پاکستان کی زبانی جاننے کیلئے یہاں کلک کریں 

پاکستانی کمیشن نے بھارت سے بگلیہار اور سلال ڈیمز سے پانی کے بہاو¿کی تفصیلات بھی مانگ لیں ۔ بھارت پاکستان کے اس مطالبے پرغور کرنے کیلئے بھی تیار ہوگیا۔ بھارت پاکستان کے انڈس کمیشن کو ڈیموں کا معائنہ کرانے پر بھی رضا مند ہوگیا ، اور امید ہے کہ رواں برس اگست سے پہلے اس دورے کے انتظامات مکمل کر لیے جائیں گے۔

مزید : قومی /اہم خبریں