پاکستان کھیلوں کیلے محفوظ ملک ہے ، غیر ملکی کھلاڑی

پاکستان کھیلوں کیلے محفوظ ملک ہے ، غیر ملکی کھلاڑی

لاہور(سپورٹس رپورٹر)پی ایس ایل تھری کے پلے آف مرحلے کیلئے لاہور آنے والے غیرملکی آفیشیلز اور کھلاڑی سکیورٹی انتظامات پرمطمئن ہیں ۔ غیر ملکی کھلاڑی اور ٹیم مینجمنٹ کے ارکان کا لاہور پہنچنے پر پرتپاک استقبال کیا گیا۔کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مینٹور سابق عالمی بلے باز سر ویون رچرڈ اور پشاور زلمی کے کپتان ڈیر ن سیمی نے تو ایئرپورٹ پر شائقین کے لئے اپنے بیانات بھی ریکارڈ کروائے ۔دونوں کا کہنا تھا کہ انہیں پاکستان دوبارہ آکر بہت خوشی ہوئی ہے، پاکستانی شائقین کو بھی حق حاصل ہے کہ وہ انٹرنیشنل کرکٹرز کو اپنی ہوم گراؤنڈ میں کھیلتا دیکھ سکیں اور ان کے ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ بحال ہو ۔ویوون رچرڈ کا کہنا تھا کہ پاکستان کھیلوں کے لئے محفوظ ملک ہے اور اس کا ثبوت یہ ہے کہ میں اپنی فیملی کے ہمراہ پاکستان آیا ہوں ۔مجھے اس بار امید ہے کہ ہماری ٹیم گزشتہ سال کے مقابلے میں زیادہ بہتر پرفارمنس کا مظاہرہ کرے گی ۔ڈیرن سیمی کا کہنا تھا کہ پاکستان میں مجھے آکر بہت خوشی ہوتی ہے اور پاکستانیوں کی میزبانی اور محبت نے مجھے بہت متاثر کیا ہے ۔دنیا کے دیگر غیر ملکی کرکٹرز کو بھی پاکستان آکر میزبانی کا لطف اٹھانا چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ وہ کئی بار پاکستان آچکے ہیں اس لئے پاکستان میرے لئے اجنبی نہیں ہے ۔انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ ان کی ٹیم پی ایس ایل کے فائنل میں پہنچے گی ۔ لاہور پہنچنے والے غیر ملکی کھلاڑیوں میں آسٹریلوی کرکٹر کرس گرین بھی شامل ہیں، جو کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی نمائندگی کررہے ہیں۔کرس گرین کا کہناہے کہ وہ پہلی بار پاکستان آنے پر بہت پرجوش ہیں۔کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے رائلی روسو بھی لاہور پہنچ گئے ہیں، انہوں نے شائقین سے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ لاہور پہنچنے پرانہیں بہت خوشی ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...