نیب میں گرفتار افسر فوری معطل ہوگا پنجاب حکومت کی نئی پالیسی

نیب میں گرفتار افسر فوری معطل ہوگا پنجاب حکومت کی نئی پالیسی

لاہور(جنرل رپورٹر)پنجاب حکومت نے نیب کے آگے سر تسلیم خم کر دیا، ہر صورت ’’میں نہ مانوں‘‘ کی پالیسی ترک کر دی، نئی پالیسی کے تحت اب نیب میں گرفتار ہونیوالا افسر فوری معطل ہوگا۔حکومت پنجاب نے نیب کے اختیارات کو تسلیم کرتے ہوئے محاذ آرائی سے بچنے کی پالیسی وضع کر دی ہے، سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد خان چیمہ کی گرفتاری کے بعد نیب لاہور اور ملتان نے تقریبا 34 اہم افسروں کی فہرست تیار کر رکھی ہیں، جس میں سکولز، ہائر ایجوکیشن،صحت، صنعت، زراعت، انرجی ، مائنز اینڈ منرلز، خوراک جیسے اہم محکموں تعینات میں رہنے والے جبکہ آبپاشی، انرجی، اوقاف و مذہبی امور، بلدیات، ہاؤسنگ اینڈ فزیکل پلاننگ، بورڈ آف ریونیو،اور ڈویلپمنٹ اتھارٹیوں کے افسران بھی شامل ہیں۔نئی پالیسی کے تحت نیب کی جانب سے کسی آفیسر کی گرفتاری پر اسے معطل کر کے چارج کسی اور افسر کو دیا جائے گا، نیب کے طلب کرنے پر مجاز اتھارٹی کو اعتماد میں لے کر ریکارڈ فراہم کر دیا جائے گا۔

نئی پالیسی

مزید : صفحہ اول