چودھری نثار مشکل وقت میں نواز شریف کا ساتھ دیں،احسن اقبال

چودھری نثار مشکل وقت میں نواز شریف کا ساتھ دیں،احسن اقبال

اسلام آباد (صباح نیوز) وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ نواز شریف اور ان کی فیملی کے ای سی ایل سے متعلق معاملات کابینہ کو بھیج دیے ہیں کابینہ فیصلہ قانون کے مطابق کرے گی ،سپریم کورٹ کے فیصلے سے کسی کوراہ فرار ممکن نہیں ہے راؤ انوار یقیناً پاکستان میں ہی ہیں۔ جنرل مشرف 16تاریخ کو عدالت میں نہ آئے تو ان کا شناختی کارڈ منسوخ، پاسپورٹ ضبط کرنے اور ریڈ وارنٹ جاری کرنے کی کاروائی شروع ہو جائے گی متعلقہ اداروں کو عدالتی حکم پہنچانے کی ہدایت کردی گئی ہیں۔ چودھری نثار کا یہ کہنا کہ ان جیسا سچ بولنے والا نہیں یہ خود ستائشی ہے چودھری نثار کا فرض ہے کہ مشکل وقت میں نواز شریف کا آگے بڑھ کر ساتھ دیں ۔ کسی دھرنا کے حوالے سے معاہدہ کا آئین سے تضاد ہوا تو آئین بالا ہو گا۔گزشتہ روز ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب سیاست میں اختلاف کریں تو پالیسی سے اختلاف کرنا چاہیے میری تربیت یہ ہے کہ جو بُرا کرے اسے نظر انداز کر کے مثبت انداز میں آگے بڑھایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عامر لیاقت ہی نہیں زیادہ تر لوگ دیکھ رہے ہیں کہ ہم ایک مڈل ٹیک آف میں ہیں۔ جب ٹیک آف کے درمیان میں پائیلٹ تبدیل کیا جائے تو اس کا نقصان ہوتا ہے اس وقت ملک میں انفراسٹرکچر سی پیک انرجی کے منصوبوں میں اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری ہو رہی ہے اور ہماری معیشت بحالی کی طرف جا رہی ہے ۔مجھے قوی امید ہے کہ اگلے الیکشن میں عوام ان پالیسیوں کے تسلسل کو ووٹ دیں گے۔ عامر لیاقت کی اس بات سے قطعی طور پر اتفاق نہیں کرتا کہ اگلے انتخابات میں تحریک انصاف کلین سویپ کرے گی۔ ہمارا خیال تھا کہ عمران خان اور تحریک انصاف کا سیاست میں آنا تازہ ہوا کا جھونکا ہے اور اگر ایک صحتمند تیسرا متبادل سیاست میں آئے گا تو اس سے ایک اچھا مقابلہ پیدا ہو گا مگر پچھلے عرصے میں ایک منفی بیانیے کے سوا کچھ سامنے نہیں آیا۔ تحریک انصاف کی سیاست کا محور نواز شریف ہے۔ گو نواز گو کے علاوہ وہ اپنا ویژن نہیں دے سکے۔ انکے اعصاب پر نواز شریف سوار ہے ۔نواز شریف پہلے سے زیادہ مقبول ہو گئے ہیں میں نہیں سمجھتا پی ٹی آئی کو گو نواز گو کے نعرے سے کوئی کامیابی ہوئی ہے۔ بدقسمتی سے خان کا بیانیہ ستیا ناس اور بیڑا غرق پر ہے جس سے ہمارے نوجوانوں میں مایوسی پید اہوئی ہے۔ الحمدوللہ پاکستان نے تیسری بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں بجلی کی لوڈشیڈنگ اور دہشتگردی کا خاتمہ ہوا ہے معیشت 6فیصد پر آگئی ہے۔ بیرونی محاذ پر درآمدات کی وجہ سے دباؤ کا سامنا ہے ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ خادم حسین رضوی سے معاہدہ مروجہ قوانین کے تحت ہوا تھا اگر کسی معاہدہ کا آئین سے تضاد ہے تو آئین بالا ہو گا ۔سپریم کورٹ کے فیصلے سے فرار کسی کے لیے آپشن نہیں۔ راؤ انوار کے بارے سوال پر انہوں نے کہا کہ راؤ انوار یقیناً پاکستان میں ہی ہیں۔ انہوں نے جانے کی کوشش کی مجھے خوشی ہے کہ امیگریشن کے عملے نے فرض شناسی کا ثبوت دیا اور ان کے فرار کی کوشش کو ناکام بھی بنایا وہ ملک میں کہیں روپوش ہیں ۔انہیں جلد عدالت کے سامنے پیش ہونا چاہیے کیونکہ جو عدالت کے عمل سے فرار ہوتا ہے اس کا کیس خراب ہوتا ہے ۔سندھ حکومت کوشش کر رہی ہے امید ہے وہ جلد راؤ انوار کو عدالت میں پیش کرنے میں کامیاب ہو جائیگی۔ زیادہ دیر قانون سے راہ فرار نہیں رہ سکتی ۔بالآخر آپ کو قانون کے سامنے پیش ہونا چاہیے اور اس کا سامنا کرنا چاہیے۔ ہم عزیر بلوچ کے کیس اور ٹرائل کا انتظار کر رہے ہیں اس کے خلاف تمام شواہد موجود ہیں۔

احسن اقبال

مزید : صفحہ اول