ٹی ٹی پی کے ترجمان کی رہائی کے حکم امتناعی میں مزید توسیع

ٹی ٹی پی کے ترجمان کی رہائی کے حکم امتناعی میں مزید توسیع

پشاور(نیوزرپورٹر)جسٹس قیصررشید اور جسٹس سید افسرشاہ پرمشتمل دورکنی بنچ نے کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان احسان اللہ احسان کی ممکنہ رہائی کے خلاف دائررٹ پرعدالتی احکامات کے بغیررہائی نہ کرنے کے حکم امتناعی میں توسیع کردی اوررٹ کی سماعت 30اپریل تک ملتوی کردی گئی فاضل بنچ نے منگل کے روز رٹ پٹیشن کی سماعت شروع کی تو اس موقع پر سانحہ اے پی ایس کے شہید طالبعلم کے والدفضل خان ایڈوکیٹ نے عدالت کو بتایاکہ سانحہ آرمی پبلک سکول جس میں ڈیڑھ سو کے قریب معصوم طالبعلموں اورسکول عملے کے ارکان کوشہید کیاگیاتھااوردہشت گردی کے اس واقعہ کی ذمہ داری کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے قبول کی تھی اوراس حوالے سے تحریک کے ترجمان احسان اللہ احسان نے خود اعلان کیاتھا اورسکیورٹی فورسز نے ملزم احسان اللہ احسان کی گرفتاری عمل میں لائی ہے جو گذشتہ 14ماہ سے سکیورٹی فورسز کی تحویل میں ہے جسے اب تک نہ ہی سزادی گئی اورنہ کسی عدالت میں پیش کیاگیاہے جبکہ انہیں خدشہ ہے کہ اسے رہا کیاجارہا ہے لہذا احسان اللہ احسان کی ممکنہ رہائی روکی جائے اوراس سے قانون کے مطابق نمٹاجائے اس موقع پروفاقی حکومت کی جانب سے ڈپٹی ااٹارنی جنرل مسرت اللہ پیش ہوئے اوربتایا کہ احسان اللہ احسان سے ابھی تفتیش جاری ہے جو مکمل نہیں ہوئی جس پرعدالت نے احکامات جاری کئے کہ احسان اللہ احسان کے ساتھ آئین وقانون کے مطابق نمٹاجائے اسے رہا نہ کیاجائے اورتفتیش میں اب تک ہونے والی پیش رفت سے عدالت کو آگاہ کیاجائے عدالت نے بعدازاں سماعت30اپریل تک ملتوی کردی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...