”اگر نواز شریف گرفتار ہوئے تو ن لیگ کا ووٹر بڑھ جائے گا لیکن یہ چیز نہیں رہے گی “ اگر نواز شریف جیل جاتے ہیں تو کیا ہوگا اور اس کا فائدہ کس کو ہوگا؟ سہیل وڑائچ کی بات سن کر نواز شریف کی پریشانی کی حد نہ رہے گی

”اگر نواز شریف گرفتار ہوئے تو ن لیگ کا ووٹر بڑھ جائے گا لیکن یہ چیز نہیں رہے ...

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی و تجزیہ کار سہیل وڑائچ کا کہنا ہے کہ اگر نواز شریف گرفتار ہو کر جیل جاتے ہیں تو ا س کا ووٹرز پر مثبت اثر پڑے گا اور ن لیگ کا ووٹر بڑھ جائے گا لیکن الیکٹیبلز پر اس کا مخالف اثر پڑے گا۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں نواز شریف کی ممکنہ گرفتاری کے بعد کی صورتحال کے حوالے سے تجزیہ کرتے ہوئے سہیل وڑائچ نے کہا کہ اگر نواز شریف گرفتار ہوئے تو اس کا مسلم لیگ ن کو فائدہ ہوگا، ووٹر کی ہمدردی نواز شریف اور مریم نواز کے ساتھ ہوجائے گی اور اس طرح ووٹ بینک بھی بڑھ سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ نواز شریف کی گرفتاری کاالیکٹیبلز پر مخالف اثر پڑے گا ، وہ ڈی مورالائز ہوجائیں گے اور انہیں یہ پیغام جائے گا چونکہ نواز شریف گرفتار ہوگئے ہیں اس لیے اگلی حکومت ان کی نہیں آئے گی۔ ایسے وقت میں الیکٹیبلز سمجھتے ہیں کہ اگلی حکومت جس کی آرہی ہے اس کے ساتھ جانا مناسب ہے۔

سہیل وڑائچ نے کہا کہ آئندہ عام انتخابات میں تحریک انصاف اور پیپلز پارٹی کی سیٹ ایڈجسٹمنٹ کو رد نہیں کیا جاسکتا کیونکہ اگر ن لیگ انتخابات کے دوران اپنے پیروں پر پکی رہی تو پی ٹی آئی اور پی پی کے پاس اکٹھے ہونے کے سوا کوئی راستہ نہیں رہے گا۔

مزید : سیاست /علاقائی /اسلام آباد

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...