کرپشن کیس تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنے پرنیتن یاہو سے پوچھ گچھ کا امکان

کرپشن کیس تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنے پرنیتن یاہو سے پوچھ گچھ کا امکان
کرپشن کیس تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنے پرنیتن یاہو سے پوچھ گچھ کا امکان

مقبوضہ بیت المقدس (اے این این)وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو پر کرپشن کیس4000 کی تحقیقات پر اثرانداز ہونے کے الزام میں انہیں پوچھ گچھ کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے

غیرملکی میڈیا کے مطابق اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاھو پرالزام ہے کہ وہ مبینہ کرپشن کیس4000 کی تحقیقات کے دوران پولیس کے کام میں روکاٹیں کھڑی کرتے رہے ہیں۔ وزیراعظم کے سابق مشیر اور وعدہ معاف گواہ نیر حیفٹس نے وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کے بارے میں کوئی بات مخفی نہیں رکھی ہے۔حیفٹس نے تفتیش کاروں کو بتایا کہ وزیراعظم نے پیزک کمپنی کے ڈائریکٹر اور شاول اولفٹیش سے درخواست کی تھی کہ وہ وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کے موبائل فون پیغامات حذف کردیں۔

واضح رہے کہ کرپشن کیس 4000 نیتن یاھو کی اس کرپشن کے گرد گھومتا ہے جس میں وہ مبنیہ طورپر ٹیلی کام کمپنی پیزک کے مالک اولفٹیش کو کروڑوں ڈالر کا فایدہ پہنچا چکے ہیں۔ اس کے بدلے میں پیزک وللا عبرانی نیوز ویب سائیٹ پر وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کی حمایت میں پروپیگنڈہ کرتے رہے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...