متحدہ عرب امارات کے ہسپتال میں غیر ملکی ملازمہ کا 2 ملین درہم کا بل معاف 

متحدہ عرب امارات کے ہسپتال میں غیر ملکی ملازمہ کا 2 ملین درہم کا بل معاف 
متحدہ عرب امارات کے ہسپتال میں غیر ملکی ملازمہ کا 2 ملین درہم کا بل معاف 

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

دبئی ( آن لائن)متحدہ عرب امارات ہسپتال انتظامیہ نے غیر ملکی ملازمہ کا 2 ملین درہم کا بل معاف کر دیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق 27 سالہ ایتھوپین نوکرانی جو متحدہ امارات میں آتے ہی کومہ میں چلی گئی تھی، 2 ملین درہم کے بل پیچھے چھوڑ کراپنے ملک واپس چلی گئی ہے۔ ملازمہ گزشتہ 7ماہ سے ہسپتال میں داخل تھی۔ متحدہ عرب امارات کے انٹرنیشل ہسپتال کی انتظامیہ نے پریس کانفرنس میں مقامی میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایتھوپین ملازمہ نجات ال نوریہ کو اسکے خاندان کے حوالے کیا گیا اور واپس اسکو اسکے ملک پھیجا گیا۔تاہم ملازمہ کے ہسپتال کی جانب 2 ملین درہم بلوں کی ادائیگی باقی تھی جو کہ انتظامیہ نے معاف کر دئیے ہیں۔

فنانس گروپ کے ڈرایکٹر کا کہنا تھا انکے پاس ماہانہ 300،000 درہم سے 500،000 درہم مالیت کے 2 سے 4 کیسزایسے آتے ہیں جن کے بلوں کی ادائیگی ایسے ہی ہسپتال انتظامیہ کو کرنی پڑتی ہے۔ ہسپتال کے سی ای او نے مقامی میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے ہسپتال انتظامیہ اس طرح کے لوگوں کے بلوں کی ادائیگی کا ان سے تذکرہ بھی نہیں کرتی ، اگر وہ بل ادا کرنے کی سکت نہ رکھتے ہوں۔

مزید : عرب دنیا