چونگی نمبر 9کے قریب کرسٹل مال کو پارکنگ فراہم کرنے کیلئے سرکاری مشینری استعمال کرنیکا انکشاف

چونگی نمبر 9کے قریب کرسٹل مال کو پارکنگ فراہم کرنے کیلئے سرکاری مشینری ...

  



ملتان (نیوز رپورٹر) بوسن روڈ کے آغاز میں تعمیر ہونیوالے کرسٹل مال پلازہ کی بااثر انتظامیہ کی جانب سے سروس روڈ کے خاتمے اور پلازہ کے مقابل ایک یوٹرن کی موجودگی میں ڈیوائیڈر توڑ کر دوسرا یوٹرن بنانے کے اقدام نے شہریوں کے اس موقف کو تقویت دی ہے کہ "اندھیر نگری چوپٹ راج" ضلعی انتظامیہ کے جملہ اداروں کی اس غیر قانونی تجاوزات، ٹریفک کی روانی کے متاثر ہونے سمیت لوگوں کی (بقیہ نمبر44صفحہ12پر)

زندگیوں سے کھیلنے والے اقدام سے چشم پوشی کی روش نے شہری حلقوں کو نہ صرف ورطہء حیرت میں ڈال دیا ہے بلکہ عام تاثر ہے کہ لاقانونیت کا یہ سارا کھیل ضلعی انتظامیہ کے ناک کے نیچے پایہء تکمیل کو پہنچا ہے اور دونوں ڈیوائیڈر توڑنے سروس روڈ تک پلازے کو پارکنگ فراہم کرنے کے لیئے باقاعدہ سرکاری مشینری استعمال کی گئی ہے افسوسناک صورتحال یہ ہے کہ کرسٹل مال پلازہ انتظامیہ کی جانب سے اس لاقانونیت پر ڈی سی آفس، ایم ڈی اے اور ٹریفک پولیس حکام نے معنی خیز زباں بندی اور آنکھیں بند کرلی ہیں جو نہ صرف ضلعی اعلی حکام بلکہ جسٹس بلاتفریق اور قانون کی بالادستی کی داعی تحریک انصاف کی مقامی قیادت کے لیئے بھی ٹیسٹ کیس بن کر رہ گیا شہریوں کے مطابق سروس روڈ کو پلازے کی بھینٹ چڑھانے سے اطراف میں مقیم شہریوں بالخصوص طلباء و طالبات اپنی چھوٹی سواریوں کے ذریعے مین روڈ کی بجائے سروس روڈ استعمال کرتے تھے ان کے لیئے مسائل پیدا ہوگئے ہیں اور پلازہ کے مقابل گاڑیوں کا سروس روڈ تک اڑدھام ٹریفک حادثات کا باعث بن رہا ہے انتظامیہ فوری نوٹس لیتے ہوئے کرسٹل مال پلازہ انتظامیہ کے غیر قانونی اقدام پر کاروائی کرکے سروس روڈ واگزار کرائے تاکہ شہریوں میں یہ تاثر زائل ہو کہ ملک میں مراعات یافتہ طبقے اور عام شہری کے لیئے الگ الگ قوانین ہیں اعلی حکام اس غیر قانونی قبضہ کے خلاف ایکشن لے اور عوام کے ٹیکسز سے تعمیر ہونیوالے بوسن روڈ کی بندر بانٹ میں ملوث سرکاری و غیر سرکاری عناصر کے خلاف کاروائی کرنے سمیت انہیں عوام کے کٹہرے میں لایا جائے۔ دریں اثنا پارلیمانی سیکرٹری ندیم قریشی سے استفسار کیا گیا کہ تحریک انصاف ملک میں بلاتفریق انصاف کی فراہمی، میرٹ اور قانون کی بالادستی کے منشور کی بنیاد پر اقتدار میں آئی ہے لیکن بوسن روڈ پر واقع کرسٹل مال انتظامیہ کی جانب سے سروس روڈ کے ڈیوائیڈر توڑنے اور ایک یوٹرن کی موجودگی میں دوسرے یوٹرن کے قیام پر ضلعی انتظامیہ نے آنکھیں کیوں بند کررکھی ہیں جس کے جواب میں انہوں نے کہا کہ قانون سے کوئی بالاتر نہیں کرسٹل مال انتظامیہ سمیت کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دیں گے کسی کو اختیار نہیں کہ وہ قانون سے کھلواڑ کرے میرٹ اولین ترجیح ہے تحریک انصاف کے اس دوسالہ اقتدار کے دوران ایک بھی جھوٹی ایف آئی آر نہیں درج ہوئی۔

کرسٹل مال

مزید : ملتان صفحہ آخر