پنجاب میں تین خصوصی کمیٹیاں کرونا وائرس سے متعلق امور کا جائزہ لے رہی ہیں‘ سمیرا ملک

پنجاب میں تین خصوصی کمیٹیاں کرونا وائرس سے متعلق امور کا جائزہ لے رہی ہیں‘ ...

  



ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف کی رہنما اور ترجمان برائے جنوبی پنجاب سمیرا ملک نے کہاہے کہ حکومت پنجاب کورونا وائرس سے بچاؤ اور پیشگی (بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

اقدامات کے سلسلے میں باقی صوبوں سے لیڈ لے رہی ہے۔ ایک خصوصی بیان میں ترجمان سمیرا ملک نے بتایاکہ پنجاب نے ملک بھر میں سب سے پہلے تقریباً 11ہفتے قبل کورونا وائرس کے خطرے کو بھانپتے ہوئے پیشگی اقدامات کا آغاز کیا۔لاہور میں مرکزی کنٹرول روم اور خصوصی کیبنٹ کمیٹی قائم کی گئی۔جنوری ہی میں تمام اضلاع کے چیف ایگزیکٹوز اور ہسپتالوں کے سربراہان کو کورونا کے سلسلے میں گائیڈلائن جاری کی گئی۔میڈیکل کالجوں کے وائس چانسلروں وائرالوجسٹس اور دیگر طبی ماہرین سے مشاورت کا عمل شروع کیاگیااور براڈبینڈ ایکسپرٹ فورم بھی قائم کیاگیا۔راولپنڈی، لاہور اور مظفرگڑھ میں 1200مریضوں کیلئے 3مخصوص ہسپتالوں میں آئیسولیشن وارڈز قائم کئے گئے۔ہر ڈویژن میں کورونا وائرس کے ممکنہ مریضوں کیلئے ایک ہسپتال مختص کیاگیا ہے۔تمام ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرہسپتالوں میں 41ہائی ڈیپنیڈنسی یونٹس قائم کئے گئے ہیں۔سمیرا ملک نے مزیدبتایاکہ ڈیرہ غازی خان میں 825،بہاولپورمیں 1200اور اور ملتان کی لیبرکالونی میں مزید 3ہزار افراد کیلئے سٹیٹ آف دی آرٹ قرنطینہ میں زائرین کی آمد جاری ہے۔پیشگی اقدامات کے طور پر تعلیمی اداروں کے ہوسٹلوں کے کمرے بھی زیراستعمال لائے جائیں گے اور جہاں تقریباً 46ہزار سے زائد افراد کو علیٰحدہ کرکے رکھا جاسکے گا۔ملتان کے قرنطینہ سینٹر میں 100بیڈز پر مشتمل عارضیہسپتال بھی قائم کیاگیا ہے۔اس ہسپتال میں 5بیڈز کا آئسولیشن وارڈ بھی بنایاگیاہے۔اسی طرح ایکسپو سینٹر اور دیگر بڑی سرکاری عمارات میں قرنطینہ قائم کرنے کا اصولی فیصلہ کیاجاچکا ہے۔انہوں نے مزیدبتایاکہ حکومت پنجاب نے پہلے مرحلے میں پی ایس ایل،جشن بہاراں، سپورٹس فیسٹیول، تمام مذہبی،سیاسی،سماجی اور عوامی اجتماعات پر دفعہ 144کے تحت پر پابندی عائد کر دی ہے اور گھروں میں بھی تقریبات پر پابندی لگا دی گئی ہے۔لاہور میں حج ٹریننگ بھی بند کر دی گئی ہے۔پنجاب سے سندھ جانے والی ٹرانسپورٹ بھی بند کی جاچکی ہے۔مری سمیت تمام ٹورازم سپارٹ سیاحوں کیلئے بند کئے جاچکے ہیں۔سرکاری دفاتر میں سٹاف کم از کم کی سطح پر لایاگیاہے۔غیرمتعلقہ افراد کی سرکاری دفاتر میں آمدورفت پر پابندی لگا دی گئی ہے۔عوام کو سرکاری امور کی انجام دہی کیلئے ہرمحکمے کے ٹیلی فون نمبرز فراہم کئے گئے ہیں تاکہ لوگ اپنے ضروری کام ٹیلی فون پر ہی کروا سکیں۔پنجاب میں شاپنگ مال، ہوٹلز، ریسٹورنٹس وغیرہ رات 10بجے بند کروادیئے جاتے ہیں۔سمیرا ملک نے کہاکہ حکومت پنجاب نے سرکاری اور نجی تعلیمی اداروں کو فی الفور بندکرا دیا ہے۔ہرقسم کے امتحانات ملتوی کئے جاچکے ہیں۔وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار نے کورونا سے بچاؤ کیلئے اقدامات کو مؤثر بنانے کیلئے سیکرٹری سپیشلائیزڈ ہیلتھ کیئرڈاکٹر نبیل اعوان کو فوکل پرسن مقرر کیاہے اور تین خصوصی کمیٹیاں قائم کی ہیں جو کورونا سے متعلق امور کا جائزہ لے رہی ہیں اور اسی طرح اضلاع میں مقامی سطح پر فوری اقدامات کیلئے ڈسٹرکٹ کمیٹیاں قائم کی گئی ہیں۔

سمیرا ملک

مزید : ملتان صفحہ آخر