ہائیکورٹ کی ہدایت پر کورونا وائرس بارے جوڈیشل افیسرز کا اجلاس

ہائیکورٹ کی ہدایت پر کورونا وائرس بارے جوڈیشل افیسرز کا اجلاس

  



بنوں (بیورورپورٹ)کرونا وائرس سے بچاوٗ کے سلسلے میں ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے پشاور ہائی کورٹ کی ہدایات پر جوڈشیل آفسران کا اجلاس طلب کیا گیا۔جسکی صدارت ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شمالی وزیر ستان محمد آسف نے کی اجلاس میں جوڈیشل آفسران کو پشاور ہائی کورٹ کی تفصیل سے آگاہ کیا گیا اور کہا گیاکہ کرونا وائرس سے بچاوٗ پر حفاظتی اقدامات پر من وعن عمل کیا جائے اور اس نسبت کو ئی کوتاہی نا برتی جائے۔تاکہ جوڈیشل آفسران۔وکلاء۔سٹاف۔سائیلین اور ملز مان کو کرونا وائرس کے موذی وبائی مرض سے بچایا جائے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے تمام سٹاف کو حفاظتی ماسک، سینی ٹائنررز،ہینڈ واش اور دیگر حفاظتی اشیاء مہیا کی۔ تمام نمایا مقامات پر حفاظتی اقدامات سے آگاہی سے مطالق پینا فلیکس اویزاں کردیے گئے ہیں اور نوٹس بورڈ پر بھی تمام حفاظتی اقدامات اویزاں کی گئی ہیں۔ تمام اقدامات کی نگرانی پشاور ہائی کورٹ پشاور کی ہدایات کی روشنی میں کراسیز اینڈ مینجمنٹ کمیٹی بھی قائم کر دی گئی ہے۔ جس میں سنئیر سول جج شمالی وزیرستان عبدالحسن ممند اسکی سر براہی کریں گے۔ کمیٹی میں دیگر ممبران کو بھی شامل کیا گیا ہے پشاور ہائی کورٹ پشاور کے احکامات پر جوڈیشل مجسٹریٹ زیر حراست ملزمان کے وارنٹس جیل میں دستخط کریں گے اور انکو پیشی کیلئے عدالت میں پیش نہیں کیا جائے گا۔ سیشن جج نے ہدایت دی کہ وہ تمام انٹری پوائنٹس پر جوڈیشل کمپلیکس میں آنے جانے والے سائلین کا طبعی معائنہ کریں۔ اور ڈی ایچ او۔ 1122سے رابطہ کریں۔ تاکہ کرونا وائرس کے پھلاو کو روکا جا سکے۔ انہوں نے واضع کیا کہ حفاظتی اقدامات کے نتیجے میں اس وبائی مرض کے پھیلاو کو روکا جا سکتا ہے۔ اور یہ سب اقدامات پشاور ہائی کورٹ کے حفاظتی اقدامات پر کئے گئے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر