کورونا کو رورکنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھا رہے ہیں،ریحان خٹک

کورونا کو رورکنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھا رہے ہیں،ریحان خٹک

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)ڈپٹی کمشنر / کمانڈنٹ ملاکنڈ لیویز ریحان خٹک نے کہا ہے کہ کمشنر ملاکنڈ ڈویژن ریاض محسود کی خصوصی ہدایت پر ضلعی انتظامیہ اور پارک آرمی اورمحکمہ صحت کے ساتھ مل کر مشترکہ طور پر کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے اپنا کردار ادا کریگی انہوں نے مزید کہا کہ کورونا وائرس سے متعلق لوگوں میں شعور و آگاہی کے فروغ کے ساتھ ساتھ اس سے بچاؤ کے لیے احتیاطی تدابیر اختیار کرنا بھی انتہائی اہم اور ضروری ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے کئے گئے انتظامات کے بارے میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر رحمت علی وزیر، اسسٹنٹ کمشنر ز بٹ خیلہ و درگئی سہیل احمدڈاکٹر سہیل الرحمن کے علاوہ ایڈ یشنل اسسٹنٹ کمشنر بٹ خیلہ محب اللہ خان بھی موجود تھے۔ڈپٹی کمشنرنے کہا کہ ضلع ملاکنڈ کے تمام انٹری پوائنٹس پر لوگوں کا سکریننگ ٹیسٹ کیا جائے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ 15 دنوں کے لیے تمام شادی ہالوں،ہوٹلوں اور دیگر اجتماعات و تقریبات پربھی پابندی لگا دی گئی ہے۔ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ 15 دنوں کے لیے پبلک ٹرنسپورٹ یعنی بسوں کے اڈوں کو بھی بند کیاجائے گا۔اس سلسلے میں انہوں نے ٹرانسپورٹر زحضرات سے تعاون کی اپیل کی ہے۔انہوں نے کہا کہ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اور ڈاکٹر صغیر المعانی پر مشتمل ایک ٹیم بھی تشکیل دی گئی۔انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس سے بچاؤ کا واحد طریقہ احتیاطی تدابیر ہیں جن میں بار بار ہاتھوں کو دھونا ہجوم والی جگہ پر ٹھہرنے سے اجتناب کرنا ماسک کا استعمال اور زکام بخار یا جسم درد جیسی شکایات کی صورت میں فوری ڈاکٹر سے رجوع کرنا شامل ہیں۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر ریحان خٹک نے ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ ریپڈ ریسپانس ٹیم روزانہ کی بنیاد پر رپورٹ پیش کرے تاکہ روزانہ کی صورتحال کے مطابق بہتر اقدامات اُٹھائے جاسکیں۔انہوں نے کہاکہ لوگوں میں اس وائرس سے بچاؤ اور احتیاطی تدابیر سے متعلق شعور بہت ضروری ہے لہٰذا ہمیں چاہیے کہ نہ صرف خود حفاظتی تدابیر اختیار کریں بلکہ جہاں تک ممکن ہو اپنے آس پاس کے لوگوں اور متعلقین کو بھی اس کی تاکید کریں۔آخر میں ضلع بھر کے علماء کرام اور غیور عوام سے اس سلسلے میں ضلعی انتظامیہ کے ساتھ مکمل تعاون کی اپیل کی ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر