پنجاب حکومت کی عدم دلچسپی، ریکارڈجلنے کی انکوائری التوا کا شکار

پنجاب حکومت کی عدم دلچسپی، ریکارڈجلنے کی انکوائری التوا کا شکار

  



لاہور(نامہ نگار)سرکاری عمارتوں میں 10سالوں کے دوران لگنے والی آگ اور اس میں جلنے والے ریکارڈ کی جوڈیشل انکوائری صوبائی حکومت کی عدم دلچسپی کے باعث التواء کا شکار ہوگئی،جوڈیشل انکوائری کے لئے ایڈیشنل سیشن جج محمد اختر بھنگو پر مشتمل ون مین ٹربیونل اکتوبر 2018ء میں قائم کیا گیا تھا،محمد اختر بھنگو نے ایل ڈی اے پلازہ میں آگ لگنے سے ہلاک ہونے اور آگ لگنے کی انکوائری کی 26گواہوں کے بیانات قلمبند کئے، بعد میں ان کاتبادلہ ہونے پر یہ جوڈیشل انکوائری التوا میں چلی گئی ہے،کوئی قابل ذکر پیش رفت نہیں ہوئی۔یادرہے کہ صوبائی حکومت نے وزیراعلیٰ پنجاب کے حکم پر سرکاری عمارتوں میں 10سالوں کے دوران لگنے والی آگ اور سرکاری ریکارڈ جلنے کی جوڈیشل انکوائری کا فیصلہ کیا تھا۔

لیکن اب یہ انکواِئری عدم دلچسپی کے باعث التواء کا شکار ہے۔

مزید : علاقائی