کرونا،تھیٹرز کی بندش نے چھوٹے فنکاروں کوپریشانی میں مبتلا کردیا

کرونا،تھیٹرز کی بندش نے چھوٹے فنکاروں کوپریشانی میں مبتلا کردیا

  



لاہور(فلم رپورٹر)شوبز کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے کہا ہے کہ کرونا وائرس کی وجہ سے زندگی کے تمام شعبوں بری طرح متاثر ہوئے ہیں خاص طور پر تھیٹر انڈسٹری کی بندش نے چھوٹے فنکاروں کو بہت زیادہ پریشانی اور تکلیف میں مبتلا کردیا ہے یہ صورتحال کب تک جاری رہے گی اس بارے میں کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے۔اگر جلد کرونا سے چھٹکارا نہ ملا تو تھیٹر سے وابستہ تمام چھوٹے فنکار،ڈانسر بوائز،اسسٹنٹ اور سٹیج منیجرز معاشی طور پر بہت زیادہ دباؤ کا شکار ہوجائیں گے۔شوبز شخصیات کا کہنا ہے کہ حکومت کو اس بارے میں سنجیدگی سے عملی اقدامات کرنا ہوں گے تاکہ غریبوں کت گھروں کے چولہے ٹھنڈے نہ پڑیں۔خرم شیراز ریاض،شاہد حمید،معمر رانا،مسعود بٹ،حسن عسکری،شانسید نور،میلوڈی کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی،صائمہ نور،میگھا،ماہ نور،انیس حیدر،ہانی بلوچ،یار محمد شمسی صابری،سہراب افگن،ظفر اقبال نیویارکر،عذرا آفتاب،حنا ملک،انعام خان،فانی جان،عینی طاہرہ،عائشہ جاوید،میاں راشد فرزند،سدرہ نور،نادیہ علی،شین،سائرہ نسیم،صبا ء کاظمی،سٹار میکر جرار رضوی،آغا حیدر،دردانہ رحمان،ظفر عباس کھچی،سٹار میکر جرار رضوی انوسنٹ اشفاق،استاد رفیق حسین،فیاض علی خاں،پروڈیوسر شوکت چنگیزی،ظفر عباس کھچی،ڈی او پی راشد عباس،پرویز کلیم، نجیبہ بی جی ندا یاسر،جویریہ عباسی،ثناء،فرزانہ تھیم،صاحبہ،جویریہ سعود،عینی رباب،حمیرا،عروج اورماریہ واسطی نے کہا کہ کرونا اب کسی ایک ملک کا نہیں بلکہ دنیا کے سینکڑوں ممالک کا مسئلہ ہے۔اللہ تعالیٰ اس ناگہانی مصیبت سے ہم سب کو بچائے اور کسی کو بھی مالی طور پر پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

مزید : کلچر