کھیلوں کی ترقی کیلئے سائنسی بنیادوں پر ٹھوس اقدامات ضروری، شاہ محمد

کھیلوں کی ترقی کیلئے سائنسی بنیادوں پر ٹھوس اقدامات ضروری، شاہ محمد

  



اسلام آباد (اے پی پی) کراٹے کے انٹرنیشنل کوچ شاہ محمد شان نے کہاہے کہ حکومت ملک میں کھیلوں کی ترقی کیلئے سائنسی بنیادوں پر ٹھوس اقدامات کرے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روزمیڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تعلیمی اداروں میں کھیلوں کے انعقاد کو یقینی بنائے تاکہ گراس روٹ سطح پر ٹیلنٹ سامنے آئے۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایسا دور تھاکہ تعلیمی اداروں میں کھیلوں کے مقابلوں کو لازمی قرار دیا جاتا تھا لیکن اب یہ مقابلے نہ ہونے کے برابر ہیں۔ اس کے علاوہ تعلیمی اداروں میں کھیلنے کیلئے گراؤنڈ تک دستیاب نہیں ہیں۔

 کراٹے کے کھیل کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں شاہ محمد شان نے کہا کہ ملک میں کراٹے کے کھیل کا بے پناہ ٹیلنٹ موجود ہے، مردوں کے علاوہ ہماری خواتین کھلاڑیوں میں بھی بہت ٹیلنٹ ہے لیکن ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت اس ٹیلنٹ کو بروئے کار لانے کیلئے ضروری اقدامات کرے اور تربیتی کیمپ لگائے جس میں کھلاڑیوں کو جدید اور اعلی تربیت دی جائے۔ بلوچستان سے تعلق رکھنے والے پاکستان واپڈا ٹیم کے کوچ شاہ محمد شان نے بتایاکہ میری کوچنگ میں بلوچستان سے تعلق رکھنے والی کھلاڑی نرگس حمید نے 2018ء میں جکارتہ میں کھیلی گئی ایشین گیمز کراٹے کے انفرادی68 کلوگرام کے ایونٹ میں کانسی کا تمغہ حاصل کرکے سب کو حیران کردیا، یہ ملکی تاریخ میں پہلی بار تھا کہ کسی خاتون کھلاڑی نے ایشین گیمز کے انفرادی مقابلوں میں کانسی کا تمغہ حاصل کرنے اعزاز حاصل کیا۔ انہوں نے کہا کہ 2019ء میں نیپال میں کھیلی گئی ساؤتھ ایشین گیمز میں پاکستان نے 32 گولڈ میڈلز حاصل کئے جن میں سے 6 گولڈ میڈلز کراٹے کے تھے لیکن کراٹے کے کھیل میں مجموعی طور پر 19 میڈلز حاصل کئے جن میں 6 گولڈ، 5 سلور اور 8 کانسی کے تھے اور گیمز میں پہلا میڈل بھی کراٹے کی کھلاڑی شاہدہ عباسی نے حاصل کیا۔ انکا بھی تعلق بلوچستان اور پاکستان واپڈا سے ہے۔ انہوں نے کہا کہ ساؤتھ ایشین گیمز میں پاکستانی کراٹے کے کھلاڑیوں کی کارگردگی بہتر رہی۔ اس بات سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ کراٹے کے ایونٹ میں 17 قومی کھلاڑیوں نے 19 ایونٹس میں شرکت کی جن میں سے 9 کھلاڑیوں کا تعلق بلوچستان سے تھا جنہوں نے میری زیرنگرانی تربیت حاصل کی اور ہمارے تمام کھلاڑیوں نے 19 میڈلز حاصل کئے۔ انہوں نے کہا کہ محمد نعمان اور اقراء انور کا انتخاب ساؤتھ ایشین گیمز میں سے چند دن پشاور میں کھیلی گئی نیشنل گیمز میں میرٹ کی بنیاد پر کیا تھا لیکن ان کھلاڑیوں نے سیف گیمز میں پہلی بار شامل ہو کر شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے میڈلز حاصل کئے۔ انہوں نے کہا کہ محمد نعمان نے سونے اور اقراء انور نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا، ان دونوں کھلاڑیوں کا تعلق ہائرایجوکیشن کمیشن سے تھا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی