شہباز تتلہ قتل کیس، مفخر عدیل اور اسد بھٹی کے جسمانی ریمانڈ میں تین روز کی توسیع، مفخر عدیل کو والد سے ملاقات کی اجازت

شہباز تتلہ قتل کیس، مفخر عدیل اور اسد بھٹی کے جسمانی ریمانڈ میں تین روز کی ...
شہباز تتلہ قتل کیس، مفخر عدیل اور اسد بھٹی کے جسمانی ریمانڈ میں تین روز کی توسیع، مفخر عدیل کو والد سے ملاقات کی اجازت

  



لاہور(آئی این پی ) شہباز تتلہ قتل اور اغوا کیس میں مرکزی ملزم ایس ایس پی مفخر عدیل اور اسد بھٹی کے جسمانی ریمانڈ میں تین روز کی توسیع کردی۔ عدالت نے مفخر عدیل کو والد سے ملاقات کی اجازت دیدی۔ تفصیلات کے مطابق لاہور کی ماڈل

ٹاون کچپہری میں شہبازتتلہ قتل کیس کے مرکزی ملزم ایس ایس پی مفخر عدیل اور اسد بھٹی کو پانچ روزہ جسمانی ریمانڈ کے بعد پیش کیا گیا۔ ملزمان سے کی گئی تفتیش کی رپورٹ عدالت میں پیش کی گئی۔ تفتیشی افسر کے مطابق ایس ایس پی مفخر عدیل اور اسد بھٹی کا بیان قلمبند کر دیا گیا ہے۔ شہباز تتلہ کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ مفخر عدیل نے کچھ لوگوں کی شناخت کی ہے۔ ابھی انویسٹی گیشن چل رہی ہے پولیس کو مزید وقت درکار ہے۔ دوران تفتیش تفتیشی افسر نے مختلف لوگوں کے بیان ریکارڈ کیئے۔مفخر عدیل کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ اس کیس کے حوالے سے جس کے جو منہ میں آیا وہ کہتا گیا۔

قتل کی دفعات لگائی ہیں لیکن اس کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔ ہم نہیں کہتے کہ شہباز تتلہ مر گیا ہے۔ شہباز تتلہ ایک ایم این اے کا رائٹ ہینڈ ہے۔ اس حوالےسے تفتیش ہونی چاہیئے۔ عدالت نے استفسار کیا کہ پولیس نے تفتیش کی ہے کہ شہباز تتلہ کی کہاں کہاں پراپرٹی ہیں؟۔جوڈیشل مجسٹریٹ بشری انور نے کیس پر سماعت کی مفخر عدیل کی درخواست منظور کرتے ہوئے والد سے ملاقات کی اجازت دیدی۔ عدالت نے تفتیشی افسر کی درخواست منظور کرتے ہوئے ملزم مفخر عدیل اور اسد بھٹی کے جسمانی ریمانڈ میں تین روز کی توسیع کردی۔ عدالت نے ملزمان کو چوبیس مارچ دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیدیا۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /لاہور