بین الاقوامی پروازوں کے داخلے پر پابندی ، کونسے لوگ ملک میں آ اور جا سکتے ہیں ؟ حکومت نے اعلان کر دیا

بین الاقوامی پروازوں کے داخلے پر پابندی ، کونسے لوگ ملک میں آ اور جا سکتے ہیں ...
بین الاقوامی پروازوں کے داخلے پر پابندی ، کونسے لوگ ملک میں آ اور جا سکتے ہیں ؟ حکومت نے اعلان کر دیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خا ن کے مشیر برائے قومی سلامتی معید یوسف نے اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں بین الاقوامی فلائٹس کی آمد پر دو ہفتوں کیلئے پابندی لگا دی گئی ہے جو کہ آج شام آٹھ بجے سے شروع ہو کر چار اپریل شام آٹھ بجے تک رہے گی ۔

تفصیلات کے مطابق معید یوسف نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں قوم کو اہم فیصلہ بتانا چاہتاہوں کہ پچھلے ہفتے پاکستان نے ایک شرط عائد کی تھی کہ جو بھی بین الاقوامی فلائٹس آ رہے ہیں ان کے مسافر کو کورونا ٹیسٹ کا سرٹیفکیٹ لانا ہو گا جو کہ منفی ہو ، اس سے بڑھ کر کل یہ فیصلہ کر لیا گیاہے کہ آج بروز ہفتہ شام آٹھ بجے سے لے کر دو ہفتوں کیلئے پاکستان کے اندر تمام بین الاقوامی فلائٹس نہیں آ سکیں گی ، یہ عارضی پابندی چار اپریل کی شام آٹھ بجے تک رہے گی ، جس دوران تمام پسنجر ، چارٹرڈ اور پرائیویٹ فلائٹس مسافر نہیں لا سکیں گی ۔

انہوں نے کہا کہ پی آئی اے کی کچھ پروازیں پاکستان سے جا چکی ہیں اور صرف ان کو واپس آنے کی اجازت ہو گی اور وہ بھی کل صبح تک واپس آ جائیں گی ۔انہوں نے کہ کہ اسی سلسلے میں یہ بھی بتانا چاہتاہوں کہ یہ ایک بہت مشکل فیصلہ تھا جو کہ لیا گیا ہے ،یہ عارضی پابندی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اس پابندی کا اطلاق سفارتکاروں پر نہیں ہو گا اور انہیں استثنیٰ ہو گا اور وہ ملک میں آ سکیں گے ۔انہوں نے کہا کہ اس عارضی پابندی کے دوران کارگو کے جہاز بھی آاور جا سکیں گے ان پر بھی اس کا اطلاق نہیں ہو گا ۔

مزید : اہم خبریں /قومی