”مراد علی شاہ نے کور کمانڈر کراچی، ڈی جی رینجرز اور آئی جی سندھ سے مشاورت مکمل کر لی ہے اور۔۔۔“ سندھ میں کیا ہونے جا رہا ہے؟ سینیٹر مرتضی وہاب نے بڑا اعلان کر دیا

”مراد علی شاہ نے کور کمانڈر کراچی، ڈی جی رینجرز اور آئی جی سندھ سے مشاورت ...
”مراد علی شاہ نے کور کمانڈر کراچی، ڈی جی رینجرز اور آئی جی سندھ سے مشاورت مکمل کر لی ہے اور۔۔۔“ سندھ میں کیا ہونے جا رہا ہے؟ سینیٹر مرتضی وہاب نے بڑا اعلان کر دیا

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینیٹر مرتضیٰ وہاب نے کورونا وائرس کے باعث صوبہ سندھ میں جزوی لاک ڈاﺅن کرنے کا عندیہ دیدیا ہے جن کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے اس حوالے سے مشاورت مکمل کر لی ہے اور حکومت کو اپنی رٹ منوانے کا وقت آ گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹر مرتضیٰ وہاب نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر جاری پیغام میں لکھا ”کچھ مشکل فیصلے لینے کا وقت آ گیا ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سندھ کے لوگوں کو گھروں میں رکھنے سے متعلق حکومتی فیصلے پر عملدرآمد کو یقینی بنانے کیلئے کور کمانڈر کراچی، ڈی جی رینجرز اور آئی سی سندھ سے مشاورت کر لی ہے۔ سندھ حکومت اس بات کو یقینی بنائے گی کہ اشیائے ضروریہ اور ادویات کی دکانیں کھلی رہیں۔“

بعد ازاں نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کی جانب سے کئے گئے چند مشکل فیصلوں پر من و عن عمل کرائے کا وقت آ گیا ہے۔ میں ان لوگوں کا تہہ دل سے شکرگزار ہوں جنہوں نے حکومتی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے اپنے اور اپنے پیاروں کی حفاظت کی حفاظت کیلئے وزیراعلیٰ سندھ کی گزارش پر عمل کیا اور احتیاط برتی، لیکن جن لوگوں نے عمل نہیں کیا ، ان کیلئے یہ کہنا چاہتا ہوں کہ حکومت کو اپنی رٹ منوانا آتی ہے، اور وقت آ گیا ہے کہ حکومت اپنا فیصلہ منوائے۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ مکمل لاک ڈاﺅن کا معاملہ بھی زیر غور ہے اور اس حوالے سے تمام معاملات کو مدنظر رکھتے ہوئے مشاورت کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ماہرین کے مطابق کورونا کے وائرس کا پتہ چلنے کیلئے 14 روز بہت اہم ہوتے ہیں اور میں عوام کو یقین دہانی کرانا چاہتا ہوں کہ جزوی لاک ڈاﺅن کی صورت میں اشیائے ضروریہ کی فراہمی ہوتی رہے گی اور تمام چیزیں میسر ہوں گی، اس لئے افراتفری مت پھیلائیں اور اطمینان رکھیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی