5روز قبل لاپتہ ہونیوالے12 سالہ بچے کی نعش نہرسے برآمد

5روز قبل لاپتہ ہونیوالے12 سالہ بچے کی نعش نہرسے برآمد
5روز قبل لاپتہ ہونیوالے12 سالہ بچے کی نعش نہرسے برآمد

  

لاہور(کرائم سیل)لاہور کینال نے ایک اور ماں کی گود اجاڑ دی ،موسم گرما آتے ہی خونی کھیل پھر سے شروع ہو گیا، گڑھی شاہو کے علاقہ سے 5روز قبل پر اسرار طور پر لاپتہ ہونے والے12 سالہ بچے کی نعش لاہور کینال سے برآمد، پولیس نے متوفی کی نعش کو پوسٹ مارٹم کے لیے مردہ خانہ میں جمع کروا دیا۔متوفی کے اہل خانہ اور پولیس کے مطابق 12سالہ عدنان گڑھی شاہو کے علاقہ ناچ گھر کا رہائشی تھا اور موٹر مکینک کی دکان پر کام کرتا تھا۔ 17اپریل بروز اتوار کو گھر سے کام کے لیے موٹر مکینک کی دکان پر گیا لیکن واپس نہیں جس پر انہیں تشویش ہوئی اور انہوں نے اس کی تلاش شروع کر دی لیکن اس کا کچھ پتہ نہیں چلا۔بعد ازاں تھانہ گڑھی شاہو میں بھی اس حوالے سے رپورٹ درج کروائی گئی لیکن محلہ داروں ،رشتہ داروں اور دوستوں سے پتہ کرنے کے باوجود عدنان کا کچھ پتہ نہیں چلا۔ جبکہ گزشتہ روز کیمپس پل کے پاس لاہور کینال میں نہانے والوں کو اس کی نعش پانی میں تیرتی ہوئی ملی جس پر انہوں نے پولیس کو اطلاع دی جنہوں نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر نعش کو نہر سے نکال کر پوسٹ مارٹم کے لیے میو ہسپتال کے مردہ خانہ میں جمع کروا دیا ہے ۔پولیس کے مطابق نعش پر تشدد یا بد اخلاقی کے کوئی نشانات نہیں ہیں اس لیے شک یہ ہے کہ وہ نہانے نہر پر پر گیا تھا جہاں ڈوب گیا ۔البتہ اصل حقائق پوسٹ مارٹم رپورٹ سامنے آنے پر ہی واضح ہوں گے۔بچے کی موت کی خبر گھر والوں پر بجلی بن کر گری اور متوفی کے گھر میں صف ماتم بچھ گئی۔

مزید : علاقائی