بیگناہ کارکنوں کوپولیس مسلسل ہراساں کر رہی ہے،خرم نواز گنڈا پور

بیگناہ کارکنوں کوپولیس مسلسل ہراساں کر رہی ہے،خرم نواز گنڈا پور

لاہور( نمائندہ خصوصی) عوامی تحریک کے مرکزی سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور نے آئی جی پنجاب کو خط لکھا ہے کہ 1200سے زائد کارکنوں پرقائم42مقدمات کی شفاف تحقیقات کیلئے غیر جانبدار جے آئی ٹی تشکیل دی جائے ،ہمارے بے گناہ کارکنوں کوآج بھی پولیس کی مدعیت میں درج کئے گئے جھوٹے مقدمات کے تحت ہراساں کیا جا رہا ہے۔خرم نواز گنڈا پور نے آئی جی پنجاب کو لکھے جانے والے خط میں تمام مقدمات کی تفصیل سے تحریری طور پر آگاہ کیا ہے ۔انہوں نے لکھا کہ یہ تمام مقدمات 23جون 2014سے لے کر ستمبر 2014کے درمیان درج کئے گئے ،انہوں نے خط میں مقدمات کی تفصیل فراہم کرتے ہوئے کہا کہ یہ مقدمات راولپنڈی،گھکھڑ، کامونکی،گوجرہ،بھکر،سرگودھا،واہ بھچراں میانوالی،خوشاب،اوکاڑہ،دیپالپور،چنیوٹ،خانیوال،بہاولپور،شور کوٹ ،بھیرہ انٹر چینج کے مختلف تھانوں میں درج کئے گئے ۔خرم نواز گنڈا پور نے آئی جی پنجاب کے نام لکھے جانے والے خط میں کہا کہ 90فی صد سے زائد مقدمات میں پولیس نے ریڈکر کے گھروں سے کارکنوں کو گرفتار کیا ،سامان لوٹا ،خواتین سے بدتمیزی کی اور الٹا جھوٹے مقدمات درج کروا لئے ۔بقیہ مقدمات پر امن کارکنوں کو راستوں میں گرفتار کر کے درج کئے گئے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان بھر کے عوام اچھی طرح جانتے ہیں کہ یہ تمام مقدمات پنجاب حکومت کی ہدایت پر کئے گئے ہیں ،اس کا مقصد پر امن لانگ مارچ کو سبو تاژ کرنا تھا ،انہوں نے آئی جی پنجاب سے کہا کہ ان تمام مقدمات کے جائزہ کیلئے غیر جانبدارجے آئی ٹی تشکیل دی جائے ۔

مزید : صفحہ آخر