پنجاب کابینہ کے اجلاس میں شرکاء کی حسب روایت ون ڈش سے تواضع

پنجاب کابینہ کے اجلاس میں شرکاء کی حسب روایت ون ڈش سے تواضع

لاہور (پ ر)وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیر صدارت پنجاب کابینہ کا اجلاس تقریباًچار گھنٹے تک جاری رہا ۔اجلاس کے دوران دس نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا۔کابینہ کے اجلاس کے دوران شرکاء کی دوپہر کے کھانے میں تواضع حسب روایت ون ڈش سے کی گئی۔ وزیراعلیٰ نے اجلاس کے دوران ہلکے پھلکے انداز میں بھی گفتگوکی۔ایک موقع پر جب تشدد کا شکار خواتین کے تحفظ کا بل پیش کیاگیاتو بحث کے دوران ایک صوبائی وزیر نے کہا کہ تشدد کا شکارمردوں کا بل بھی آنا چاہیے کیونکہ موجودہ دور میں مرد زیادہ مظلوم ہیں،جس پر وزیراعلیٰ نے ازراہ تفنن کہاکہ آپ تمام مردوں کی بات نہ کریں صرف اپنی بات کریں،جس پر اجلاس کے شرکاء مسکرادےئے ۔پنجاب میرج فنکشنز بل 2015ء پر بحث کے دوران وزیراعلیٰ نے کہا کہ ون ڈش اوروقت کی پابندی کا اطلاق بڑے بڑے فارم ہاؤسز پر بھی یقینی بنایا جائے کیونکہ قانون سب کیلئے برابر ہے۔وزیراعلیٰ نے شادی بیاہ کی تقریبات کے حوالے سے 1998ء کے قانون کا از سر نو جائزہ لیتے ہوئے ون ڈش ختم کر کے سردیوں میں سوپ اور گرمیوں میں ٹھنڈے مشروب کی تجویزکا جائزہ لینے کی ہدایت کی اور کہا کہ یہ 1998میں جو قانون بنایاگیاتھا اس سے عام آدمی سفید پوش طبقے کو حقیقی معنوں میں ریلیف ملا تھااورمعاشرے میں امیر اور غریب کے درمیان تفاوت کے خاتمے کیلئے ایسے اقدامات انتہائی ضروری ہیں۔ہم نے عام آدمی کی عزت نفس کو بھی بحال کرنا ہے ۔کابینہ کے ممبران نے وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف کی اس تجویز کا بھر پورخیر مقدم کیا ۔

مزید : صفحہ آخر