بہار میں بڑے مندر کی تعمیر کے لئے مسلمانوں نے اپنی زمین دیدی

بہار میں بڑے مندر کی تعمیر کے لئے مسلمانوں نے اپنی زمین دیدی

نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں مسلمانوں کے استحصال کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیاجاتا لیکن جب ریاست بہار میں ہندوؤں نے اپنا سب سے بڑا مندر تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا تو مسلمانوں نے بے مثال بڑے پن کا ثبوت دیتے ہوئے اپنی درجنوں ایکڑ انتہائی قیمتی زمین عطیہ کردی۔ مندر کی تعمیر کیلئے ذمہ دار ادارے مہاویر مندر ٹرسٹ کے سیکرٹری اچاریہ کشور کُنال نے مسلمانوں کی دریا دلی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں نے نہ صرف زمین عطیہ کی ہے بلکہ خاصی زمین ارزاں نرخوں پر خریدنے میں بھی بہت مدد کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کی مدد کے بغیر عظیم مندر کا خواب پورا کرنا ممکن نہیں تھا کیونکہ ان کی درجنوں ایکڑ زمین مندر کے لئے مجوزہ جگہ کے عین درمیان واقع تھی۔ کُنال کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کے بڑے پن کی جتنی بھی تعریف کی جائے کم ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مندر کی تعمیر کا آغاز جون میں مشرقی شامپاران ضلع کے جانکی نگر علاقے میں کیا جائے گا اور یہ 200ایکڑ پر مشتمل ہوگا جس میں سے تقریباً 50 ایکڑ مسلمانوں کی طرف سے عطیہ کئے گئے ہیں۔ مندر پر تقریباً 5ارب بھارتی روپے خرچ کئے جائیں گے اور اس کی عمارت میں 20ہزار افراد کے بیٹھنے کی گنجائش ہوگی۔ یہ مندر نیپال کی سرحدکے قریب ہو گا اوریہی وجہ ہے کہ اسے زلزلہ پروف بنانے کے لئے بھی خصوصی اقدامات کئے جائیں گے۔

مزید : صفحہ آخر