بوسے کی نوعیت کیسی تھی؟دبئی کی عدالت میں عجیب وغریب مقدمے کی سماعت

بوسے کی نوعیت کیسی تھی؟دبئی کی عدالت میں عجیب وغریب مقدمے کی سماعت
بوسے کی نوعیت کیسی تھی؟دبئی کی عدالت میں عجیب وغریب مقدمے کی سماعت

  

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) دبئی پولیس نے سڑک کنارے کار میں بیٹھ کر بوس و کنار کرنے والے جوڑے کو عدالت پہنچا دیا جہاں ان کے بوسے کی نوعیت کے بارے میں بحث و مباحثہ ہوتا رہا۔

مزیدپڑھیں:وہ ملک جہاں کی نصف آبادی کے باس ’فل ٹائم‘نوکری نہیں ہے لیکن پھر بھی دنیا میں سب سے زیادہ خوش

”گلف نیوز“ کے مطابق دو پولیس اہلکاروں نے جارجیا سے تعلق رکھنے والی 34 سالہ خاتون منیجر اور مصر سے تعلق رکھنے والے 35 سالہ سیلز مین کو گرفتار کیا۔ پولیس اہلکاروں کا کہنا تھا کہ جوڑا سڑک کنارے کھڑی کار میں تقریباً 5 منٹ تک بوس و کنار میں مصروف رہا جبکہ ان پر شراب نوشی کے الزامات بھی عائد کئے گئے۔ جوڑے نے عدالت میں بوس و کنار کے الزامات کی تردید کی جبکہ شراب نوشی کا اعتراف کیا۔ خاتون نے عدالت کو بتایا، ”یہ ناممکن ہے کہ میں اس کے ہونٹوں کا بوسہ لوں۔۔۔ میں ایسا نہیں کرسکتی۔ میں محض اپنا گال اس کے گال کی طرف لے گئی تھی کیونکہ میں اسے گُڈ بائے کہنا چاہ رہی تھی اور لفٹ دینے کے لئے شکریہ ادا کرنا چاہ رہی تھی۔ میں اسے گُڈ بائے بوسہ دینا چاہ رہی تھی۔“

 مصری شخص نے بھی الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ خاتون لفٹ دینے پر اس کا شکریہ ادا کررہی تھی اور اس مقصد کے لئے اس کے گال پر بوسہ دینے کے لئے آگے بڑھی تھی کہ وہ پیچھے ہٹ گیا۔ اس کا اصرار تھا کہ حقیقی بوس و کنار کا کوئی معاملہ پیش نہیں آیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس