ہائی کورٹ :میمو گیٹ سکینڈل کے مرکزی کردار حسین حقانی اور ان کی اہلیہ کو واپس لانے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

ہائی کورٹ :میمو گیٹ سکینڈل کے مرکزی کردار حسین حقانی اور ان کی اہلیہ کو واپس ...
ہائی کورٹ :میمو گیٹ سکینڈل کے مرکزی کردار حسین حقانی اور ان کی اہلیہ کو واپس لانے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائی کورٹ نے میمو گیٹ سکینڈل کے مرکزی کردار سابق سفیر حسین حقانی اور ان کی اہلیہ کو پاکستان لانے کے لئے درخواست فیصلہ محفوظ کر لیا.
مسٹر جسٹس فرخ عرفان خان نے محمد افتخار حسین راجپوت کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل بیرسٹر جاوید اقبال جعفری نے موقف اختیار کیا کہ میمو گیٹ سکینڈل کے مرکزی کردار سابق سفیر حسین حقانی اور ان کی اہلیہ فرح ناز اسفہانی کے وکلاءنے ان کے واپس آنے کی یقین دہانی کروائی تھی جس کے بعد انہیں بیرون ملک جانے دیا گیا،اب وہ واپس آنے سے انکاری ہیں ۔
انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ حسین حقانی پاکستانی سفیر ہوتے ہوئے بیرونی طاقتوں کے اشاروں پرملکی سالمیت کے خلاف کام کرتے رہے . میمو گیٹ کمیشن نے بھی حسین حقانی کو گنہگار قرار دیا مگر اسکے باوجود ملک سے غداری کرنے والے حسین حقانی کوامریکہ جانے کی اجازت دی گئی اور سابق سفیر نے قومی خزانے کو 50لاکھ ڈالرز کا بھی نقصان پہنچایا ہے ،ملکی سالمیت کو داو پر لگانے پر میمو گیٹ سکینڈل کے مرکزی کردار سابق سفیر حسین حقانی اور انکی اہلیہ فرخ ناز اسفہانی کو گرفتار کر کے پاکستان لانے اور میمو گیٹ کیس کو از سر نو سننے کا حکم دیا جائے۔ عدالت نے میمو گیٹ سکینڈل کے مرکزی کردار سابق سفیر حسین حقانی اور ان کی اہلیہ کو پاکستان لانے کے لئے درخواست فیصلہ محفوظ کر لیا۔

مزید : لاہور