امپورٹرز کی سہولت کے لیے کمرشل بنکوں میں مددگار ڈیسک لگائے جائیں، راجہ عامر اقبال

امپورٹرز کی سہولت کے لیے کمرشل بنکوں میں مددگار ڈیسک لگائے جائیں، راجہ عامر ...

  

راولپنڈی ( کامرس ڈیسک) الیکٹرانک امپورٹ فارم سے جعلی اور دوہری ادئیگیاں روکنے میں مدد ملے گی، معشیت کو دستاوویزی شکل دینا اسٹیٹ بنک کی اولین ترجیح ہے ملک میں زرمبادلہ لانے کا سہرا تاجر برادری کے سر پر ہے تاجروں کی آسانی کے لیے وی باک (WeBOC)کے تحت ایکسپورٹ اور امپورٹ فارم کو خودکار کیا گیا ہے اب ای فارم کے ذریعے ادائیگیوں کا ریکارڈ بہتر انداز میں مانیٹر ہو سکے گا اس کے ساتھ ساتھ برآمدی اشیاء کے اعداد و شمار بھی فوری طور پر میسر آ سکیں گے ان خیالات کا اظہار اسٹیٹ بنک کے ڈائریکٹر ایکسچینج پالیسی فضل محمود نے راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ سسٹم بہتر ہو رہا ہے کچھ شکایات ضرور ہوں گی لیکن کافی حد تک معاملات ٹھیک ہو چکے ہیں صدر راولپنڈی چیمبر راجہ عامر اقبال نے اپنے خیر مقدمی خطاب میں کہا کہ چیمبر کا کام اپنے ممبران اور تاجر برادری کے حقوق کے لیے آواز بلند کرنا ہے موجودہ حالات میں بین الاقوامی قوانین اور ملکی معیشت کے لیے بہتر ہے کہ تمام ریکارڈ درست رکھا جائے اور دستاویزی شکل دی جائے امپورٹرز کوکمرشل برانچوں میں مددگار ڈیسک کا نا ہو نا، برآمدی اشیا کا لین دین نہ کرنا، آدھی ادائیگی کی سہولت، ایل سی کے مسائل اور کم سے کم غیر ملکی کرنسی رکھنے کے بارے میں بنکوں کی پالیسی کا نہ ہونا جیسے مسائل کا سامنا ہے اسٹیٹ بنک فوری طور پر ان معاملات پر توجہ دے۔

انہوں نے کہا کہ ای فارم سے جعلی ادائیگیوں کی روک تھام ہو گی اور امپورٹ کے صیحح اعداد و شمار سامنے آئیں گے بعد میں سوالات و جوابات کی ایک نشست بھی ہوئی جس میں امپورٹرز نے اپنے مسائل کھل کر بیان کیے اس موقع پر صدر راجہ عامر اقبال سینئر نائب صدر راشد وائیں، نائب صدر عاصم ملک، مجلس عاملہ کے اراکین، کمرشل بنکوں کے نمائندے اور امپورٹرز کی ایک کثیر تعداد موجود تھی

مزید :

کامرس -