امریکا اور مغرب مسلم دنیا کے دشمن نہیں، سعودی عرب

امریکا اور مغرب مسلم دنیا کے دشمن نہیں، سعودی عرب

  

ریاض(آن لائن)سعودی وزیرِ خارجہ عادل بن احمد الجبیر نے کہا ہے کہ امریکا اور مغرب اسلامی دنیا کے دشمن نہیں ہیں، امریکی صدر ٹرمپ ریاض میں سعودی عرب اور اسلامی دنیا کے رہنماؤں سے اہم ملاقات کرینگے ، انہوں نے کہا کہ یہ اسلامی دنیا کیلئے بھرپور پیغام ہے کہ امریکا اور مغرب آپ کے دشمن نہیں ہیں، اسی طرح یہ مغرب کیلئے بھی موثر پیغام ہے کہ اسلام آپ کا دشمن نہیں ہے۔صدر ٹرمپ کے دورے سے اسلامی دنیا اور مغرب کے درمیان عموماً اور باخصوص مسلمان ممالک اور امریکا کے درمیان مکالمے کی نوعیت تبدیل ہوجائیگی، ٹرمپ کا یہ دورہ تمام شدت پسندوں کو تنہا کر دیگا، خواہ وہ ایران ہو، داعش ہو یا القاعدہ ہو ، کیونکہ یہی وہ لوگ ہیں جو کہتے ہیں کہ مغرب مسلمانوں کا دشمن ہے ، دریں اثنا عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق حال ہی میں سعودی اور امریکی اہلکاروں کے درمیان رابطوں کے بعد ماحول بدل گیا ہے ، سعودی عرب بھی ماضی کی باتوں کو بھول جانا چاہتا ہے ، کیونکہ اب وہ امریکا کو اپنا بڑا اور قابلِ اعتماد اتحادی سمجھتا ہے، یہی وجہ ہے کہ سعودی عرب صدر ٹرمپ کے دورے کو ایک تاریخی دورہ قرار دے رہا ہے۔واضح رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ امریکا کی صدارت سنبھالنے کے بعد اپنے پہلے غیر ملکی دورے میں سعودی عرب، اسرائیل اور ویٹی کن جا رہے ہیں جو تین بڑے مذاہب اسلام، یہودیت اور عیسائیت کے مراکز ہیں، عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق اسلامی دنیا کے رہنماؤں کے ساتھ ٹرمپ کی ملاقاتوں کا محور دہشتگردی اور شدت پسندی رہے گا۔ سعودی عرب کیلئے ٹرمپ کا یہ دورہ بہت اہم ہے کیونکہ وہ خطے میں اپنے حریفوں کو بتانا چاہتا ہے کہ امریکا اسکے ساتھ کھڑا ہے۔

مزید :

عالمی منظر -