گردہ سکینڈل کیس کی سماعت،گروہ ملک بھر میں پھیلا ہوا ہے، ایف آئی اے

گردہ سکینڈل کیس کی سماعت،گروہ ملک بھر میں پھیلا ہوا ہے، ایف آئی اے

  

لاہور(نامہ نگار)ضلع کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے گردہ سکینڈل کے 5ملزموں کے جسمانی ریمانڈ میں 3روز کی توسیع کرتے ہوئے قرار دیا کہ ایف آئی اے گردہ سکینڈل کی تحقیقات میرٹ پر کرے اور ملزموں کو فیئر ٹرائل کا مکمل حق فراہم کرے، عدالت نے ایک بار پھر ایف آئی اے کی جانب سے ملزموں کو وقفہ کے دوران پیش کرنے پر برہمی کا اظہار کیا۔جوڈیشل مجسٹریٹ فاروق اعظم سوہل کے روبرو مرکزی ملزموں کو پیش کیاگیا، عدالت نے ملزموں کو عدالتی وقفہ کے دوران پیش کرنے پر ایف آئی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ مقدمہ کے تفتیشی افسر کو عدالتی وقت کا علم ہونا چاہئے، کوئی شک نہیں گردہ سکینڈل ہائی پروفائل کیس ہے اور گردوں کی پیوند کاری سنگین جرم ہے، ایف آئی اے گردہ سکینڈل کی تحقیقات میرٹ پر کرے، فاضل جج نے پولیس فائل کیساتھ لگائی گئی دستاویزات پر ٹیگ نہ لگانے پر بھی اظہار برہمی کیا۔، عدالتی استفسار پر تفتیشی افسر نے بتایا کہ گردہ سکینڈل کا گروہ پورے پاکستان میں پھیلا ہوا ہے اور ملزموں کی نشاندہی پر مزید گرفتاریاں ہو رہی ہیں۔ عدالت نے فریقین کے دلائل سننے اور ریکارڈ کا جائزہ لینے کے بعد گردہ سکینڈل کے 5ملزموں کے جسمانی ریمانڈ میں 3روز کی توسیع کر دی۔

مزید :

صفحہ آخر -