ٹرمپ ،شاہ سلمان ون آن ون ملاقات،سعودی عرب اور امریکہ کے درمیان 280ارب ڈالرز کے معاہدے

ٹرمپ ،شاہ سلمان ون آن ون ملاقات،سعودی عرب اور امریکہ کے درمیان 280ارب ڈالرز کے ...

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں)سعودی عرب اور امریکہ کے درمیان 280ارب ڈالرز کے معاہدوں اور یادداشتوں پر دستخط ہو گئے۔ریاض کے الیمامہ شاہی محل میں ہونیوالی تقریب کے آغاز میں سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹر مپ نے طویل المدتی اسٹریٹیجک ویژ ن کے معاہدے پر دستخط کئے۔اس معاہدے کے بعد دونوں ممالک کے وزراء نے دفاع، عسکری پیداو ا ر ی، توانائی اور ٹیکنالوجی سمیت سرمایہ کاری، تیل و دیگر باہمی دلچسپی کے شعبوں میں تعاون بڑھانے سے متعلق معاہدوں اور یاد د ا شتو ں کا تبا دلہ کیا۔اس سے قبل سعودی فرماروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان بند کمرے میں ایک گھنٹے تک مذ ا کر ا ت ہوئے۔وائٹ ہاؤس کے مطابق یہ معاہدے دہشت گردی سے نمٹنے اورسعودی عرب اور خطہ خلیج کی طویل مدتی سلامتی میں کارآمد ہوں گے۔دفاعی معاہدے پر دستخط کی تقریب میں امریکی وزیرخارجہ ٹلرسن بھی موجود تھے۔اس سے قبل سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبد ا لعز یز اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان باضابطہ مذاکرات ریاض کے الیمامہ شاہی محل میں ہوئے۔شاہی محل میں شاہ سلمان بن عبد ا لعز یز نے صدر ٹرمپ اور خاتون اول سمیت امریکی وفد کے ارکان کو استقبالیہ دیا اور امریکی صدر کو سعودی عرب کے اعلیٰ ترین ایوارڈ شاہ عبد ا لعز یز میڈل سے نوازا۔ظہرانے کے بعد شاہ سلمان اور مہمان صدر نے محل میں قائم آرٹ گیلری کا دورہ کیا جہاں پر اسلامی تہذیب وتمدن اور فن وثقافت کو عکاسی کرنیوالے فن پاروں کو دیکھا۔اس دوران شاہ سلمان نے صدر ٹرمپ کو اسلامی فن پاروں سے متعلق بریفنگ بھی د ی ، گیلری میں سعودی وامریکی فنکاروں کے تیار کردہ فن پارے رکھے گئے تھے۔مذاکرات کے بعد امریکی صدر ٹرمپ سعودی ولی عہد ووزیر داخلہ شہزادہ محمد بن نائف اور نائب ولی عہد ووزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان سے الگ الگ ملاقاتیں بھی کریں گے۔قبل ازیں ڈونلڈ ٹرمپ بطور امریکی صدر ہفتہ کی صبح جب اپنے پہلے غیر ملکی دورے کے پہلے مرحلے میں امریکہ کی خاتون اول میلانیا ٹرمپ ،بیٹی اور صدارتی مشیر ایوانکا ٹرمپ اور داماد جیریڈ کوشنر کے ہمراہ ریاض کے ہوائی اڈے پر پہنچے تو سعودی بادشاہ سلمان بن عبدالعزیز نے استقبال کیا۔ دونوں راہنماؤں نے مصافحہ کیا اور ٹرمپ نے اس موقع پر کہا یہاں آنا ایک بڑے اعزاز کی بات ہے۔صدر ٹرمپ کا طیارہ جیسے ہی ریاض پہنچا اس وقت فضا میں کئی طیاروں نے پرواز کی اور فضا میں سرخ، سفید اور نیلے رنگ چھوڑے۔صدر ٹرمپ نے سعودی عرب آمد کے فوری بعد بادشاہ سلمان سے ایک مختصر ملاقات کی اور انہوں نے ایک ترجمان کے ذریعے ائیرپورٹ کے ٹرمینل کے اندر آپس میں گفتگو کی۔اس کے بعد صدر ٹرمپ کی گاڑیوں کا قافلہ ان کے ہوٹل کی طرف روانہ ہو گیا جہاں کچھ دیر آرام کے بعد وہ اپنے دوررے کے دوران طے شدہ پروگرام کے تحت باقاعدہ ملاقاتوں کا آغازکیا،سعوی عرب آمد پر صدر ٹرمپ کا شاندار استقبال کیا گیا اور ریاض شہر کی سڑکوں پر مختلف مقامات پر صدر ٹرمپ کی تصاویر کے کئی بل بورڈ آویزاں کیے گئے۔خاتون اول میلانیا ٹرمپ سیاہ لباس میں ملبوس تھیں لیکن انہوں نے اپنا سر نہیں ڈھانپا ہواتھا جو عمومی طور پر سعودی عرب کا دورہ کرنیوالے غیر ملکی شخصیات کیلئے روایتی طور پر ضروری ہوتا ہے۔صدر ٹرمپ کے دورے کا مقصد خطے میں دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے مضبوط شراکت داری اور رابطوں کو قائم کرنا ہے۔ٹرمپ آج امریکہ عرب اسلامک سمٹ سے ’اسلام کے پر امن وژن کیلئے امیدیں‘ کے موضوع پر خطاب کرینگے ،صدر ٹرمپ سعودی عرب کے بعد اسرائیل اور ویٹیکن جائیں گے اس کے علاوہ برسلز میں نیٹو اجلاس میں شرکت اور سسلی میں گروپ آف سیون ملکوں کے اجلاس میں بھی شرکت کریں گے۔

سعودیہ امریکہ معاہدے

مزید :

کراچی صفحہ اول -