زرداری کیلئے دعائے خیر کرتا رہا، فقیر کبھی کسی کو نہیں چھوڑتا ارد گرد کے لوگ تعصب کے باعث دوریاں پیدا کرتے ہیں:پیر اعجاز شاہ

زرداری کیلئے دعائے خیر کرتا رہا، فقیر کبھی کسی کو نہیں چھوڑتا ارد گرد کے لوگ ...
زرداری کیلئے دعائے خیر کرتا رہا، فقیر کبھی کسی کو نہیں چھوڑتا ارد گرد کے لوگ تعصب کے باعث دوریاں پیدا کرتے ہیں:پیر اعجاز شاہ

  

لاہور( این این آئی )سابق صدر و پیپلز پارٹی پارلیمنٹرینز کے سربراہ آصف علی زرداری کے روحانی پیشوا پیر اعجازنے کہا ہے کہ فقیر کبھی کسی کو نہیں چھوڑتا ارد گرد کے لوگ تعصب کے باعث دوریاں پیدا کرتے ہیں،زرداری کیلئے دعائے خیر کرتا رہا، پیپلز پارٹی کے دور میں اگر ایوان صدر سے اٹھ کر واپس آ جاتا تو 10روز میں حکومت چلی جاتی، بلاول بھٹو زرداری وزارت عظمیٰ کے منصب پر اس وقت تک فائز نہیں ہو سکتے جب تک کسی پیر فقیر سے تعلق نہ جوڑ لیں،تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے آستانہ پر آنے کےلئے ابھی تک رابطہ نہیں کیا۔

’مجھے کالے جادو پر ایک کتاب ملی جس میں لکھا تھا اپنے بیٹے کو قربان کر دو تو یہ فائدہ ہو گا اس لئے میں نے 14 سالہ بیٹے کا گلہ کاٹ ڈالا ‘ کس فائدے کیلئے باپ نے یہ سفاک ترین کام کر ڈالا؟ جان کر آپ بھی کانپ اُٹھیں گے,خبر پڑھنے کیلئے کلک کریں

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے پیر اعجاز نے کہا کہ آصف علی زرداری کے والدین سے محبت کی بنیاد پر ہر سال برسی مناتا ہوں،25مئی کو حاکم علی زرداری کی برسی لاہور میں مناﺅں گا ۔ انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری سے سورة یاسین پر معاہدہ اور حلف لیا ہے کہ زندگی بھر ساتھ نہیں چھوڑوں گا،آصف زرداری سے محبت ہے کسی وزارت یا عہدے کی لالچ نہیں ۔

سابق صدر کے اردگرد رہنے والی عورتیں اور مرد مفادکےلئے ساتھ جڑے ہیں، فقیر کبھی کسی کو نہیں چھوڑتا ارد گرد کے لوگ تعصب کے باعث دوریاں پیدا کرتے ہیں،چند عورتیں اور مرد آصف علی زرداری کے دل میں میرے خلاف بغض پیدا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری وزارت عظمیٰ کے عہدے پر اس وقت تک فائز نہیں ہو سکتے جب تک کسی پیر فقیر سے تعلق نہ جوڑ لیں،بلاول بھٹو زرداری کی زندگی کےلئے اللہ کی مرضی سے حفاظت کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ پیر فقیر اپنی جگہ اور اپنے مریدوں کو کبھی تنہا نہیں چھوڑتا، آصف علی زرداری میرے ساتھ رابطہ رکھیں یا نہ رکھیں دعائے خیر کرتا رہوں گا۔لاہور : اقتدار پر کون براجمان ہو گا پتہ ہے لیکن منع کیا گیا ہے۔

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے آستانہ پر آنے کےلئے ابھی تک رابطہ نہیں کیا، جب بھی عمران خان آستانے پر آئے تو میری ہی شرائط پر آئیں گے ،عمران خان میرے کہنے پر عمل کریں وزیراعظم بنا دوں گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی کے دور میں اگر ایوان صدر سے اٹھ کر واپس آ جاتا تو 10روز میں حکومت چلی جاتی۔

مزید :

لاہور -