شادیوں کے بہانے ”رنگیلے“ نکے تھانیدار نے خواتین کی تذلیل معمول بنالیا

شادیوں کے بہانے ”رنگیلے“ نکے تھانیدار نے خواتین کی تذلیل معمول بنالیا
شادیوں کے بہانے ”رنگیلے“ نکے تھانیدار نے خواتین کی تذلیل معمول بنالیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

قصور (ویب ڈیسک) پنجاب پولیس میں تعینات بااثر اہلکار نے شادیاں رچاکر حواءکی بیٹیوں کو خوار کرنے کے بعد ان کے جہیز کا سامان ہڑپ کرنے کے عمل کو اپنا وطیرہ بنالیا۔ مجبوراً طلاق لے لینے والی شریف گھرانوں کی بیٹیوں نے رسوائی کے ڈر سے چپ سادھ لی تاہم ملزم کی تیسری بیوی نے انصاف کے لئے عدالت سے رجوع کرلیا۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

روزنامہ خبریں کے مطابق بھٹہ سوہن والا بستی چراغ شاہ قصور کا محمد انور پولیس میں ہیڈکانسٹیبل تعینات ہوا اور اس وقت تھانہ لیاقت آباد لاہور میں اے ایس آئی کے طور پر ڈیٹی دے رہا ہے۔بتایا گیا ہے کہ محمد انور نے اسی علاقہ کی شازیہ بی بی سے پہلی شادی کی اور شازیہ بی بی کے اہلخانہ سے جہیز کے سامان میں قیمتی اشیاءحاصل کرلیں ،پھر دانستہ طور پر شازیہ کے ساتھ لڑائی جھگڑا شروع کردیا۔ خاوند کے تشدد اور مارپیٹ سے دلبرداشتہ ہوکر شازیہ بی بی اپنے میکے چلی گئی تو محمد انور جہیز کے سامان پر قابض ہوگیا اور جہیز کی واپسی کا تقاضہ کرنے پر اپنے سسرال والوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینا شروع کردیں جس پر شریف شہریوں نے خاموشی اختیار کرلی۔

اس کے بعد محمد انور نے قصور کے ہی ایک شریف خاندان سے تعلق رکھنے والی صائمہ بی بی سے دوسری شادی کرلی اور اس کے لاکھوں روپے مالیت کے جہیز کا سامان بھی ہڑپ کرنے کے بعد صائمہ بی بی کے ساتھ بھی پہلے والی واردات دہرا دی گئی۔ صائمہ بی بی کے ورثاءعزت کے ڈر سے خاموش ہوگئے جس کے بعد محمد انور نے پہلے کی طرح خود کو کنوارہ ظاہر کرکے گوجرانوالہ کے ایک شریف گھرانے کی لڑکی سے شادی کرلی۔ وہاں سے بھی لاکھوں روپے مالیت کا سامان جہیز کی مد میں حاصل کیا اور بعدازاں تیسری اہلیہ کو بھی گھر سے نکال دیا ۔

اس سلسلہ میں جب لوگوں سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ محمد انور کا گھرانا بری شہرت کا حامل ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ان کے قریبی رشتہ دار بھی انہیں چھوڑ چکے ہیں او رکوئی شریف شہری ان سے رابطہ رکھنا مناسب نہیں سمجھتا۔ انہوں نے کہا کہ محمد انور نے اس طرح لاکھوں روپے مالیت کی نقدی، زیورات اور سامان وغیرہ تو ہڑپ کرلیا مگر اس کی مکاری اور غلط بیانی کی وجہ سے شریف گھرانے تباہ ہوکررہ گئے ہیں۔

مزید : علاقائی /پنجاب /قصور /جرم و انصاف