گوئٹے مالا کے سفارت خانے کی القدس منتقلی پر مراکش کا جوابی اقدام

گوئٹے مالا کے سفارت خانے کی القدس منتقلی پر مراکش کا جوابی اقدام
گوئٹے مالا کے سفارت خانے کی القدس منتقلی پر مراکش کا جوابی اقدام

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

الرباط (صباح نیوز)افریقی ملک مراکش نے گوئٹے مالا کی جانب سے تل ابیب سے اپنے سفارت کار نے کی مقبوضہ بیت المقدس منتقلی کے جواب میں گوئٹے مالا سٹی اور الرباط کو جڑواں شہر قرار دینے کا معاہدہ معطل کردیا ۔

مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق الرباط کے ڈپٹی میئر لحسن العمرانی نے ایک بیان میں کہا کہ گوئٹے مالا سٹی اور الرباط کو جڑواں شہر قرار دینے کا ایک معاہدہ کیا گیا تھا مگر گوئٹے مالا کی جانب سے القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور سفارت خانے کی القدس منتقلی کے بعد اس پر عمل درآمد ممکن نہیں رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے نزدیک فلسطینی قوم کے ساتھ اظہار یکجہتی اہم ہے، ہم امریکا اور گوئٹے مالا کے القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کے فیصلوں کو تسلیم نہیں کرتے۔

واضح رہے کہ گوئٹے مالا نے تل ابیب میں قائم اپنا سفارت خانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کردیا تھا جبکہ اس سے قبل امریکا نے بھی اپنا سفارت خانہ القدس منتقل کرتے ہوئے فلسطینی قوم کے ساتھ ناانصافی اور اسرائیلی ریاست کی طرف داری کا ایک ناقابل معافی اقدام کیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی