ماہ صیام میں بھی فلسطینیوں پر بیرون ملک اسرائیلی سفری پابندیاں برقرار

ماہ صیام میں بھی فلسطینیوں پر بیرون ملک اسرائیلی سفری پابندیاں برقرار
ماہ صیام میں بھی فلسطینیوں پر بیرون ملک اسرائیلی سفری پابندیاں برقرار

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

را ملہ(اے این این )ماہ صیام میں بھی اسرائیلی حکام کی جانب سے نام نہاد سیکیورٹی وجوہات کی آڑ میں فلسطینی شہریوں کے بیرون ملک سفر عاید ناروا پابندیوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق فلسطینی پولیس نے کہا ہے کہ کاغذات اور سفری دستاویزات مکمل ہونے کے باوجود اسرائیلی حکام نے الکرامہ گذرگاہ سے اردن داخل ہونے والے متعدد فلسطینیوں کو بیرون ملک جانے سے روک دیا، ان میں سے بعض شہریوں کو یہ بھی نہیں بتایا گیا کہ انہیں سفر سے کیوں روکا گیا ہے۔گزشتہ ایک ہفتے کے دوران الکرامہ گذرگاہ سے 32 ہزار فلسطینیوں کو دو طرفہ آمد ورفت کے لیے گزرنے کی اجازت دی گئی، اس دوران صہیونی فوجیوں نیدسیوں فلسطینیوں کو مشتبہ قرار دے کر گرفتار بھی کیا۔

دوسری جانب فلسطینی شہریوں اور انسانی حقوق کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ صہیونی حکام کی جانب سے شہریوں کے بیرون ملک سفر پرعاید پابندیاں انسانی حقوق کی سنگین پامالی ہیں اور اسرائیلی انتظامیہ فلسطینیوں کو بلیک میل کرنے اور انہیں خوف زدہ کرنے کے لیے ان پرسفری قدغنیں عائد کررہی ہے۔

مزید : بین الاقوامی