آنے اور جانے والے؟

آنے اور جانے والے؟
آنے اور جانے والے؟

  


ملکی حالات و واقعات کی رفتار معمول سے زیادہ تیز ہو گئی ہے اور آئندہ دنوں میں شاید یہ کچھ اور بڑھ جائے گی۔ صدارتی نظام کا غلغلہ عمران خان کے چلچلاو¿ کی جاندار افواہیں، عثمان بزدار کا قیام یا رخصتی اور پاکستان تحریک انصاف کی صفوں میں طوفان صفت دھڑا بندی ۔ کیا گندے کپڑے گھر کے باہر دھونے کا وقت آگیا ہے؟

ایسا نہیں جیسا مخالف حلقے کہتے آئے ہیں کہ پی ٹی آئی میں ادھر ادھر سے کچرا جمع ہو گیا ہے۔ ان کا اپنا کیا ہے ؟ لوگ کہتے ہیں جو جہاں سے ملا ، اٹھا لیا۔ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ سے نکلے، نکالے ہوئے بعض ایسے بھی ہیں جنہیں خاص اہتمام سے ایک خاص مقصد کے لئے پاکستان تحریک انصاف میں بھیج دیا گیا تھا ۔ ہر جگہ استثناءموجود ہوتاہے ۔ مشیر وزیراعلیٰ پنجاب چودھری محمد اکرم ازحد نفیس آدمی تھے مگر انہیں جبراً رخصت پر بھیج دیا گیا۔حکیم الامت شاعر مشرق کے پوتے سینیٹر ولید اقبال کے بارے میں زمانہ جانتا ہے وہ لاکھوں میں نہیں کروڑوں میں ایک ہیں۔عبدالعلیم خان کانا م تبدیلی کے لئے تحریک میں کبھی نظرانداز نہیں کیاجاسکے گا۔

کہاجاتا ہے کہ اسے بھی تبدیل کر دیا گیا ہے۔ اس گھر کو واقعی گھر کے چراغ سے آگ لگی ؟جواب ہاں اور ناں دونوں میں ہو سکتاہے، جبکہ آثار و قرائن کی اپنی الگ دنیا ہے۔ بعد از ضمانت ان کے حقیقت پسندانہ بیان نے ایک طوفان بپا کر دیا ہے مبنی برصداقت لےکن تلخ۔ میاں برادران جیل سے باہر آاورجاچکے اور خواجہ برادران ؟ سوال یہ ہے کہ اور کون اندر جانے والا ہے ؟ یہ اندر و باہر کا سلسلہ تادیر جاری رہے گا۔ لوگ صاف انداز میں پوچھتے ہیں کہ اس مشق کا ملک و قوم کو کیا فائدہ ؟ گورنر پنجاب چودھری محمد سرور کا سیاست میں اہم کردار ہے،جو کبھی برطانوی پارلیمنٹ کا حصہ رہ کر پوری دُنیا میں نام کما اور اپنی قابلیت کا لوہا منواچکے ہیں۔

ان کی وطن دوستی ، سوز اندرون بیرون ، جذبہ تنظیم ملک و ملت سے محبت اور قوم کے لئے کچھ کر گزرنے کی دیرینہ امنگ مسلم لیگی دورِ حکومت میں گورنر تھے تو آئینی کردار تک ہی محدود رہنے کو کہاگیا۔ آئین میں گورنر کا کردار؟ اب وہ گورنر ہوئے توبھی یاد دلایاجاچکا کہ وہ حدود کار سے تجاوز کرتے جاتے ہیں۔

چودھری محمد سرور ہر شہری کی خاطر صاف پانی اور صحت کی سہولت ، ملک میں اندرونی و بیرونی سرمایہ کاری کا خواب دیکھتے دکھاتے اور سرور فاو¿نڈیشن کو مفید عام بناتے ہیں تو قابل ستائش ہونا چاہئے نہ کہ انہیں آلو چھولے بیچنے کا احساس دلایاجائے۔شاید بیرون ملک طویل دورہ ان کے لئے مسائل کا سبب ٹھہرا ۔

اس سلسلہ میں پاکستانی نژاد کینیڈا میں مقیم ممتاز بزنس مین طارق رسول ڈھلوں نے خاص تعاون اور گرمجوشی کا اظہار کیا۔ وزیر اعظم پاکستان اپنے کپتان اور کرکٹ ٹیم کی مثالیں دیتے نہیں تھکتے، حالانکہ کرکٹ گراو¿نڈ اور سیاست کے میدان میں نمایاں فرق ، بلکہ تضاد پایا گیا ہے ۔ عمران خان آہستہ آہستہ غیر منتخب ٹیم کو آگے بڑھاتے جاتے ہیں ۔اب تو آئی ایم ایف کی ٹیم نے یلغار کی ہے۔ہمارا ایک معاشرتی المیہ یہ بھی ہے کہ بڑے مناصب پر بوجہ چھوٹے افراد کا قبضہ ہے قبضہ ناروا ۔

میاں محمد نوازشریف نے ضمانت میں توسیع اور بیرون ملک علاج کے لئے عدالت عظمیٰ میں درخواست دائر کی تھی۔ عدالت عظمیٰ سے ریلیف کی امید نے دم توڑ دیا۔ پولیس سروس سے گریڈ بائیس میں ریٹائر ہونے والے سید حسین اصغرجو ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب بھی رہ چکے ہیں ۔ ان کی نیک شہرت ،دیانت داری ،فرض شناسی میں کسی کو کلام نہیں۔ ان کا ڈپٹی چیئرمین نیب بننا لازماً اعتماداور اعتبار میں اضافہ کا سبب بناہے۔

مزید : رائے /کالم