سحری کے لئے گھر سے نکلنے والی پاکستانی لڑکی کا پولیس والوں نے گن پوائنٹ پر ریپ کردیا

سحری کے لئے گھر سے نکلنے والی پاکستانی لڑکی کا پولیس والوں نے گن پوائنٹ پر ...
سحری کے لئے گھر سے نکلنے والی پاکستانی لڑکی کا پولیس والوں نے گن پوائنٹ پر ریپ کردیا

  


راولپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک) راولپنڈی میں قانون کے رکھوالے ہی درندے بن گئے اور ایک حوا کی بیٹی کو نوچ ڈالا۔ ایکسپریس ٹربیون کے مطابق راولپنڈی کے تھانہ روات کے 3پولیس اہلکاروں نے ایک چوتھے ساتھی کے ساتھ مل کر ایک 22سالہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ لڑکی ایک ہاسٹل میں رہتی تھی اور اپنی ایک اور دوست کے ہمراہ سحری کے لیے نکلی تھی۔ سحری کے بعد وہ پیدل اپنے ہاسٹل کی طرف جا رہی تھی کہ کار میں سوار ان چاروں ملزمان نے اسے اغواءکر لیا۔

ملزمان اسے ایک ویران علاقے میں لے گئے اور گن پوائنٹ پر گاڑی میں ہی اسے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ صبح اسے ایک سڑک پر اتار کر ملزمان چلے گئے اور جاتے ہوئے لڑکی کے پاس موجود 30ہزار روپے اور زیورات وغیرہ بھی لوٹ کر لے گئے۔ملزمان کے خلاف متاثرہ لڑکی کی مدعیت میں تھانہ روات میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ ملزمان میں شامل پولیس اہلکاروں کے نام نصیر، راشد منہاس اور عظیم تھے جبکہ ان کے چوتھے ساتھی کا نام عامر تھا۔ روات پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور ان سے تفتیش کی جا رہی ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /راولپنڈی