آٹا،بحران ٹل گیا، ملز کی ہڑتال ختم، مگر؟

آٹا،بحران ٹل گیا، ملز کی ہڑتال ختم، مگر؟

  

صوبائی حکومت اور فلور ملز ایسوسی ایشن کے درمیان کامیاب مذاکرات کے بعد فلور ملز مالکان نے ہڑتال ختم کر دی اور عید سے قبل آٹے کی قلت اور بحران کا خطرہ ٹل گیا۔پنجاب کے سینئر وزیر عبدالعلیم خان اور فلور ملز ایسوسی ایشن کے دس رکنی وفد کے درمیان ملاقات اور بات چیت ہوئی، مرکزی چیئرمین عاصم رضا اور صوبائی صدر عبدالرؤف مختار نے وزیر خوراک کو اپنے مسائل سے آگاہ کیا، طے پایا ہے کہ نہ صرف ہڑتال ختم ہو گی، بلکہ عید تک آٹے کے نرخوں میں اضافہ بھی واپس ہو گا اور قیمت نہیں بڑھے گی۔ عید کے بعد حکومت اور ایسوسی ایشن کے درمیان تفصیلی مذاکرات ہوں گے اور حتمی طریق کار طے کر لیا جائے گا کہ عوام کو پریشانی نہ ہو اور فلور ملز والوں کا نقصان بھی نہ ہو، اِس ملاقات میں یہ بھی طے پایا کہ ملز کے گوداموں پر چھاپے نہیں مارے جائیں گے اور محکمہ خوراک کے اہلکار ہی ملز مالکان سے مل کر معلومات کا تبادلہ کریں گے۔وزیر خوراک نے بتایا کہ حکومت بھاری رقم کے عوض گندم خریدتی اورپھر اس کی سٹوریج کے اخراجات بھی برداشت کرتی ہے تاکہ عوام کی سہولت کے لئے وافر گندم میسر رہے اور بعدازاں فلور ملز کو بھی مہیا کی جا سکے۔یہ خوش آئند بات ہے کہ حکومت کی طرف سے مثبت اور جلد قدم اٹھایا گیا اور بات چیت سے معاملہ نمٹ گیا۔ دوسری صورت میں قلت کے باعث بحران کا خطرہ موجود تھا۔ سینئر وزیر نے جو قدم اٹھایا اور عید کے بعد ملز مالکان کی مشاورت سے حتمی پالیسی مرتب کرنے کا جو یقین دلایا، توقع ہے کہ یہ پورا ہو گا اور مزید تمام امور مذاکرات ہی سے طے پائیں گے،توقع ہے کہ دونوں فریق عوامی بہبود کا خصوصی خیال رکھیں گے، جو پہلے ہی معاشی بدحالی اور بے روزگاری کے ہاتھوں پریشان حال ہیں۔

مزید :

رائے -اداریہ -