’کرنل کی بیوی ‘ کی ویڈیو وائرل ، لیکن کچھ عرصہ پہلے اسی گاڑی پر ’کرنل ‘ بھی پولیس والوں کو گالیاں نکال رہا تھا ، ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل

’کرنل کی بیوی ‘ کی ویڈیو وائرل ، لیکن کچھ عرصہ پہلے اسی گاڑی پر ’کرنل ‘ بھی ...
’کرنل کی بیوی ‘ کی ویڈیو وائرل ، لیکن کچھ عرصہ پہلے اسی گاڑی پر ’کرنل ‘ بھی پولیس والوں کو گالیاں نکال رہا تھا ، ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل

  

ایبٹ آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )اس وقت ایک ویڈیو نے ہر طرف ہنگامہ سا برپا کر رکھاہے جس میں ایک خاتون ہزارہ موٹرے وے پر پولیس اہلکاروں کے ساتھ بدتمیزی کر رہی ہے اور اس نے اپنا تعارف کرنل کی بیوی کے طور پر کروایا ۔

تفصیلات کے مطابق کوئی بھی معاملہ ہو کہیں نہ کہیں سے معلومات سوشل میڈیا پر آ ہی جاتی ہیں لیکن سب سے مشکل مرحلہ یہ ڈھونڈنا ہوتاہے کہ کونسی معلومات درست ہیں اور کس میں کتنی سچائی ہے اس لیے اس پر مکمل طور پر انحصار کرنا مشکل ہو جاتا ہے ۔

پولیس اہلکاروں کے ساتھ بدتمیزی اور چیک پوسٹ پر ادھم مچانے والی خاتون کے شوہر کی شناخت ” کرنل فاروق خان “ کے نام سے ہوئی ہے تاہم اس کی سرکاری سطح پر ابھی کوئی تصدیق یا تردید نہیں ہو سکی ہے جبکہ یہ نام سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہو چکاہے ۔

سوشل میڈیا پر ایک اور ویڈیو تیزی کے ساتھ وائرل ہو رہی ہے جس میں ایک شخص کو ٹریفک وارڈن کے ساتھ بدتمیزی کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے ، اس ویڈیو کے بارے میں بتایا جارہاہے کہ یہ شخص مبینہ طور پر ہزار موٹر وے پر ادھم مچانے والی خاتون کے شوہر کرنل فاروق خان ہیں اور یہ خبرتیزی کے ساتھ سوشل میڈیا پر پھیلتی چلی جارہی ہے ۔

سوشل میڈیا پر تیزی کے ساتھ پھیلنے والی معلومات کے مطابق یہ ویڈیو 2018 کی ہے جب کرنل فاروق خان نے ٹریفک وارڈن کو گاڑی روکنے اور جرمانہ کرنے کی کوشش میں دھمکیاں دیں اور ساتھ آخر میں بندوق نکال کر دھمکایا اور وہاں سے گاڑی لے کر فرار ہو گئے ۔

ٹویٹر صارفین دونوں ویڈیو ز کے درمیان تعلق کو ثابت کرنے کیلئے کافی محنت کے ساتھ کوشش جاری رکھے ہوئے ہیں تاہم یہ جان کرآپ کو بھی حیرت ہو گی کہ صارفین کا کہناہے کہ جو گاڑی 2018 میں ٹریفک وارڈن سے بدتمیزی اور گالم گلوچ کرنے والے اس شخص کے پاس تھی  جو کہ خود کو کرنل بتا رہا تھا،اسی  نمبر پلیٹ والی گاڑی میں گزشتہ روز پولیس اہلکاروں کے ساتھ بدتمیزی کرنے والی خاتون سوار تھیں  جو خود کو کرنل کی اہلیہ پکار رہی تھیں۔

اسد علی خان نامی صارف نے ٹویٹر پر ویڈیو شیئر کی اور کہا کہ ” خاتون کے شوہر کرنل محمد فاروق خان کی 2018 کی ویڈیو ۔“

عمیر وحید نامی صارف نے بڑا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ لیفٹیننٹ کرنل کو ایبٹ آ باد میں 2018ٹریفک وارڈن کے ساتھ بدتمیزی کرنے پر پاک فوج کے ” ایف ایف سینٹر “ سے باہر تعینات کر دیا گیا تھا ، دونوں ویڈیوز میں ایک ہی گاڑی دیکھی جا سکتی ہے ، یہ ہماری پاک فوج کے چہرے کو وہ نقصان پہنچا رہے ہیں ، جو پی ٹی ایم اور بھارت کرنے میں کاناکام رہے ۔“

روک منی نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے لکھا کہ ” دو سال پہلے ان کے شوہر نے بھی پولیس اہلکار سے بدتمیزی کی تھی ۔“

امر زیب خان نامی صارف نے لکھا کہ ” کہ یہ کرنل اور اس کی بیوی پرانی پاپی ہیں ، اس کرنل کا نام فاروق خان ہے جسے 2018 میں پولیس اہلکارسے بدتمیزی کرنے پر چارج کیا گیاتھا ، اس کے نتیجے میں اسے ایف ایف سینٹر سے باہر تعینات کر دیا گیا ۔، تاہم 2020 میں اسی نمبر کی گاڑی پھر دوبارہ سامنے آ گئی جس کا نمبر ACC-35 ہے ۔

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ ٹریفک وارڈن کو گالیاں نکالنے والے شخص کی ویڈیو کو بغور سنا جائے تو جب وہ وہاں سے فرارہوتا ہے تو پولیس اہلکار پر اگلی شاہراہ پر موجود اہلکار کو گاڑی کو روکنے کیلئے وائر لیس کرتا ہے جس پر وہ گاڑی کانمبر یہی بتاتا ہے ۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -